لبرل فاشسٹوں کا فرمودہ

16 مارچ 2010
اجمل شبیر..........
ایک لبرل فاشسٹ صحافی کو نڈر صحافی مجید نظامی کے اس بیان پر غصہ تھا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ ”پاکستان ہندوستان کو شکست دیکر رہے گا کیونکہ ہمارے ایٹمی گھوڑے ان کے ایٹمی کھوتوں سے زیادہ طاقتور ہیں“۔ ممکن ہے کہ یہ بات ترقی پسند کھوتوں کے علم میں نہ ہو۔
موصوف پاکستان میں اسلامی شعار، نظریہ پاکستان، اسلامی تہذیب و تمدن کے خلاف زبان درازی کرتا رہا ہے۔ یہ لبرل فاشسٹ ’اجوکا‘ کے نام سے بیہودہ اور لچرپن سے بھرپور تھیٹر بھی چلارہا ہے۔ اس تھیٹر میں پیش کئے جانے والے سٹیج ڈراموں میں ’اسلام، مسلم خواتین اور پاکستانی نظریاتی تہذیب و تمدن کا مذاق اڑایا جاتا ہے۔ اجوکا تھیٹر کو بھارت و امریکہ جانب سے باقاعدہ بھتہ دیا جاتا ہے۔ بھارت کو پاکستان کے ہاتھوں شکست نوشتہ دیوار ہے۔ بے باک صحافت اور نظریہ پاکستان کے سپوت کا خواب ضرور حقیقت میں بدلے گا۔ لبرل فاشسٹوں کی لابی کا یہ نام نہاد کالم کار پی ٹی وی کا ڈپٹی مینجنگ ڈائریکٹر ہے۔ مقتدر محب وطن حلقوں بالخصوص وزیر اطلاعات کائرہ صاحب کی ذمہ داری ہے کہ وہ فوراً اس ملک دشمن شخص کا محاسبہ کریں۔ اس طرح کے لبرل فاشسٹ پاکستان کی سلامتی اور خود مختاری کے خلاف غیر ملکی دشمن قوتوں کے ساتھی ہیں۔ ہندو تہذیب کو پاکستانی تہذیب کہنے والا یہ امریکی و بھارتی ایجنٹ بدقسمتی سے سرکاری ٹی وی کا اعلیٰ افسر بنا دیا گیا ہے۔ یہ اس قوم کی بدنصیبی نہیں تو اور کیا ہے؟ اللہ تعالیٰ قرآن مجید میں فرماتا ہے دشمن کے مقابلے میں اپنے گھوڑے تیار رکھو اس عالم فاضل لبرل کو شاید یہ مثال ناگوار گزری ہے اب ان کا علاج ؟ اللہ تعالیٰ ہی انہیں فرمان سے آگاہ فرمائے۔ نظریہ پاکستان اور اسلام ہی پاکستان کی بنیاد اور پہچان ہے۔ ایٹمی جنگ سے ڈرنے والا لبرل فاشسٹ کیا یہ نہیں جانتا کہ بھارت پاکستان کی سلامتی کے خلاف کس قسم کے تباہ کن اقدامات اٹھا رہا ہے؟ پنجاب یونیورسٹی میں کی گئی تقریر میں مجید نظامی نے لبرل فاشسٹوں کی پسماندہ سوچ اور منافرت پر مبنی نظریات کا پردہ چاک کیا۔ لبرل فاشسٹ ہی پاکستان میں تعصب اور جہالت کی ذہنیت کو پروان چڑھا رہے ہیں۔ ان لبرل فاشسٹوں ہی کی گھناونی سازش کا نتیجہ ہے کہ آج پاک فوج اپنے عوام کے ساتھ جنگ میں ملوث ہو چکی ہے۔ لاہور، اسلام آباد، کراچی وغیرہ میں خود کش حملوں کی وجہ یہی لبرل فاشسٹ ہیں۔
نفرت اور دہشت گردی کے سوداگر یہ فاشسٹ Establishment کے ایک گروہ کے ساتھ مل کر دہشت گردی کی جنگ کو اپنی اپنی جنگ بنا کر پاکستان میں نظریاتی تقسیم کو ہوا دے رہے ہیں۔ اس نظریاتی تقسیم ہی کا نتیجہ ہے کہ پاکستان میں ہر طرف انتشار اور خلفشار ہے۔ لبرل فاشسٹ اس نظریاتی پاکستان کے منافق کردار ہیں۔ عوام کسی صورت ان منافق کرداروں کی کم علمی، تعصب کا شکار ہونے کے لئے تیار نہیں۔ سیکولر حلقے مضحکہ خیز اور بے بنیاد الزام تراشیاں کرکے پاکستان کو بھارت کا غلام بنانے کی ناکام کوشش کر رہے ہیں۔ پاکستان میں غلبہ اسلام ہی وہ ذریعہ ہے جس سے پوری دنیا کے مسلم ممالک میں اسلام کی نشاة ثانیہ کا خواب حقیقت کا روپ دھارسکتا ہے۔ اس خواب کو حقیقت کا روپ دینے سے روکنے کے لئے امریکہ اور بھارت پاکستان میں سیکولر اور لبرل فاشسٹ حلقوں کو ایجنٹ کے طور پر استعمال کر رہے ہیں۔مغربی تہذیب کے یہ غلام اسلامی تہذیب و تمدن کے حقیقی دشمن ہیں اس لئے پاکستان میں ان حلقوں کا محاسبہ ضروری ہے۔ عوام کو اسلامی تہذیب و تمدن سے بیگانہ کرنے اور ان پر امریکی و بھارتی تہذیب مسلط کرنے کے لئے ان لبرل فاشسٹوں کو دھڑا دھڑ ڈالر مل رہے ہیں۔