چیف جسٹس کی ریلوے میں کرپٹ مافیا کیخلاف کاروائی احسن اقدام ہے، اشتیاق آسی

16 اپریل 2018

اسلام آباد(خبر نگار)ریلوے پریم یونین کے سیکریٹری جنرل اشتیاق احمد آسی نے چیف جسٹس پاکستان کے اقدام کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ قومی ادارے کی تباہی کا باعث بننے والے ان کرپٹ مافیا کے خلاف کاروائی کو منطقی انجام تک پہنچا کر ایک قومی خدمت کا باب رقم کیا جائے ۔ایک سو چھتیس انجنوں اور تین سو پچھتر کوچز کے ناکارہ کھڑے ہونے کے ذمہ داروں کو بھی عدالت عالیہ انصاف کے کٹہرے میںکھڑا کرے اس کرپشن اور ادارے کی بد انتظامی کے بڑے سرخیل چیف ایگزیکٹو اور اس کے حواریوں کو بھی تفتیش میں شامل کیا جائے ۔اپنے ایک جاری بیان میں کہا کہ ریلوے انجنوں کی خریداری اور ان انجنوں کی وارنٹی پیرڈ میں ناکارہ ہونے پر خاموشی سے غیر قانونی طور پرنان ٹیکنیکل طریقے سے انسانی جانوں کو خطرات میں ڈال کر ویلڈنگ کے زریعے چلا دیا اور کمشن ہضم کرنے کا اقدام کر کے ظلم کیا ہے ۔ان انجنوں کا آئے روز فیل ہونا معمول بن چکا ہے لیکن کوئی جوابدہ نہیں اس لیئے کہ تمام چور ایک دوسرے کو بچانے میں جتے ہوئے ہیں ۔پام ائل کلب کا کیس بھی عدالت عالیہ میں ہے اس میں ایک ارب کی ڈیل کی گئی ہے اس میں ایک سیاسی شخصیت اور بھی شامل ہے ۔ریلوے افسران نے بھی گیارہ کروڑ ڈکار لیئے ہیں ۔سیکیورٹی کے نام پر دیواروں کی تعمیر کا جعلی طریقہ واردات بھی خصوصی تفتیش کا متقاضی ہے ۔ریلوے ٹریک کو اپ گریڈ کرنیکا ڈرامہ بھی لوٹ مار کا طریقہ واردات ہے ۔ریلوے مزدوروں سے کام کرا کے جعلی ٹھیکیداروں کو ادائیگیاں کر کے اپنی جیبیں بھری گئی ہیں ۔اس معاملے پر کوہاٹ ٹریک اور ریلوے اسٹیشن کی تزئین آرائیش کے نام پر اڑتیس کروڑ کا انجکشن لگا دیا گیا ہے ۔اس سے پہلے نارووال ریلوے اسٹیشن پر پینتیس کروڑ روپے کی لوٹ مار کی گئی ہے ۔