ملازمین کی تنخواہوں میں سالانہ ترقی میں روا رکھی جانیوالی نا انصافی کا ازالہ کیا جائے

16 اپریل 2018

اسلام آباد(آئی این پی)نیشنل بینک آف پاکستان کے ملازمین نے در پیش مسائل کے ازالے میں انتظامیہ کی بے حثی پر شدید تشویس کا اظہار کرتے ہوئے چیف جسٹس سپریم کورٹ سے پر زور اپیل کی ہے کہ ملازمین کی تنخواہوں میں سالانہ ترقی میں روا رکھی جانیوالی زیادتی کا سو موٹو نوٹس لے کر انتظامیہ کو تمام ملازمین کو ہسب مراتب سالانہ ترقیاں دینے کا پابند بنایا جائے انہوں نے کہا کہ اپریزل سسٹم کے تحت ملازمین سے شدید نا انصافی اور زیادتی روا رکھی جا رہی ہے جس سے ان کو شدید مالی نقصان برداشت کرنا پڑ رہا ہے پشاور ہائیکورٹ بھی اس کو ختم کرنے کا فیصلہ دے چکی ہے مگر انتظامیہ عمل درآمد کرنے سے گر یزاں ہے ملازمین نے انتظامیہ سے پر زور مطالبہ کیا ہے کہ اپریزل سسٹم کو ختم کر کے تنخواہوں میں سالانہ ترقی کی سابقہ پالیسی پر عمل درآمد کیا جائے تاکہ ملازمین احساس مرحومی سے نجات حاصک کر سکیں ایک ارضداش میں کہا گیا ہے کہ سالانہ ترقی میں جانب داری سے کام لیا جا رہا ہے جس سے مستحق ملازمین کی شدید حق تلفی کی جا رہی ہے اس کی وجہ سے ملازمین میں شدید بے چینی پائی جاتی ہے ۔