سیاسی عدم استحکام سے سرمایہ کاری محدود ہوگئی

16 اپریل 2018

سکھر(بیو رو رپورٹ ) آل پاکستان آرگنائزیشن آف اسمال ٹریڈرز اینڈ کاٹیج انڈسٹریز کے چیئرمین حاجی محمد ہارون میمن نے ملک میں جاری بدترین سیاسی عدم استحکام کی وجہ سے حصص مارکیٹ کے پوائنٹ تیزی سے نیچے آنے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں طویل عرصے سے جاری سیاسی بے یقینی اور عدم استحکام کی وجہ سے سرمایہ کاری محدود ہوکر رہ گئی ہے جس کی وجہ سے اسٹاک ایکسچینج میں مسلسل مندی اور حصص پوائنٹ نیچے گرنے کا عمل تیزی سے جاری ہے جو کہ معاشی صورتحال کیلئے ایک بڑا لمحہ فکریہ ہے سیاسی بے یقینی کی صورتحال نے صنعت و تجارت سمیت معاشی صورتحال اقتصادی معاملات اور کاروباری سرگرمیوں کو بے حد متاثر کیا ہے جس کے منفی اثرات مرتب ہورہے ہیں صنعتی شعبہ زوال پذیر ہے جس کی وجہ سے مزدور طبقہ اور مختلف کاروبار سے متعلق شعبہ جات میں بھی مشکلات کاسامنا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے تاجروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ حاجی محمد ہارون میمن نے مزید کہا کہ سیاسی استحکام کے خاتمے کیلئے قومی سیاسی قیادت کو مثبت تعمیری اور مہذب انداز سے آگے آکر کردار ادا کرنا ہوگا تاکہ ملک میں جاری معاشی بحران ختم ہوسکے ۔ انہوں نے حکام سے مطالبہ کیا کہ سیاسی بے یقینی کے خاتمے کیلئے مستقل بنیادوں پر لائحہ عمل طے کیا جائے تاکہ پاکستان کی تمام اسٹاک ایکسچینج اور حصص مارکیٹوں میں کاروبار کی صورتحال معمول پر آسکے۔