عرب ممالک کا پہلی بار یونیسکو میں اسرائیل کا ساتھ دینے کا فیصلہ

16 اپریل 2018

مقبوضہ بیت المقدس(اے این این ) اسرائیل پہلی بار عرب ممالک کو اقوام متحدہ کے ثقافتی ادارے یونیسکو میں اپنا ساتھ ملانے میں کامیاب ہوگیا ہے۔ میڈیا رپورٹ میں بتایا ہے کہ اسرائیل، عرب ممالک اور فلسطینی اتھارٹی پہلی بار عربوں اور فلسطینیوں کی طرف سے مقبوضہ فلسطین سے متعلق تجاویز پر رائے شماری ملتوی کرانے میں اپنے ساتھ ملانے میں کامیاب ہوگیا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ یونیسکو میں مقبوضہ فلسطینی اراضی سے متعلق بعض تجاویز پر رائے شماری ملتوی کرانے میں اسرائیل کامیاب ہوگیا ہے۔ یہ رائے شماری اب آئندہ اکتوبر تک ملتوی کردی گئی ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ عرب اور فلسطینی حلقوں کی طرف سے پیش کردہ تجاویز پر رائے شماری آنے والے دنوں میں ہونا تھی مگر یہ پہلا موقع ہے کہ اسرائیل ان تجاویز پر رائے شماری ملتوی کرانے کے لیے فلسطینی اتھارٹی اور عرب ممالک کو قائل کرنے میں کامیاب رہا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ عرب ممالک اور اسرائیل کے درمیان ایک خفیہ سمجھوتہ بھی طے پایا ہے کہ یونیسکو میں تجاویز پر رائے شماری ملتوی کرانے کے عرصے کے دوران اس موضوع پر ذرائع ابلاغ میں کسی قسم کی لابنگ نہیں کی جائے گی اور عرب ممالک کے ذرائع ابلاغ اس پر خاموش رہیں گے۔یونیسکو میں اسرائیلی مندوب کرمل شما ہکوہین کا کہنا ہے کہ عرب ممالک کے ساتھ ان کا اتفاق جشن کے مترادف ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ امریکہ نے اس معاہدے میں اہم کردار ادا کیا ہے اور واشنگٹن کے خصوصی شکر گذار ہیں۔