بجلی کا شارٹ فال 3 ہزار میگاواٹ ہو گیا، لوڈ شیڈنگ میں اضافہ

16 اپریل 2018

ملتان (نامہ نگار خصوصی‘ علاقائی نمائندوں سے) صوبہ پنجاب بالخصوص جنوبی پنجاب کے حصہ کی 600 میگا واٹ بجلی کراچی کو فراہم کی جا رہی ہے ذرائع کے مطابق موجودہ حکومت کراچی میں بجلی بحران پر قابو پانے کے لئے صوبہ پنجاب کے حصے (کوٹہ) کی 600 میگا واٹ بجلی کراچی کو فراہم کررہی ہے اس مجموعی فراہمی میں میپکو (جنوبی پنجاب ریجن) سے 350 میگا واٹ بجلی فراہم کی جا رہی ہے کراچی کو بجلی کی اس فراہمی سے پنجاب اور جنوبی پنجاب میں لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے ۔کوٹ ادو سے کورٹ رپورٹر کے مطابق گرمی کے موسم میںشدید اضا فہ ہوتے ہی کو ٹ ادو شہر میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ طو یل ہونا شروع ہو گیا ہے سخت گرمی اور درجہ حررات کے بڑھتے ہی طویل و غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے شہری سخت اذیت و پریشانی میں مبتلا ہونے لگے ،کوٹ ادو کے شہریوںکا کہنا ہے کہ موسم کی شدت اور بجلی کی لوڈ شیڈنگ سے زندگی اجیرن اور تمام کاروبار زندگی معطل ہو کے رہ گئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے سکولوں اور گھروں میںبجلی و پانی کی کمی سے شدید دشوار ی کا سامناکر نا پڑتا ہے۔میلسی سے خبرنگار کے مطابق گر می میں میلسی اور گر دو نو اح میں غیر اعلا نیہ لو ڈشیڈنگ نے شہر یو ں کو اذیت میں مبتلا کر رکھا ہے،غیر اعلانیہ لو ٖڈ شیڈنگ کا دورانیہ 10سے12گھنٹے تک پہنچ چکا ہے۔شجاع آباد سے خبرنگار کے مطابق چھٹی کے روز بھی بجلی اورگیس کی بدترین لوڈشیڈنگ جاری رہی جس پر شہریوںنے شدید احتجاج کرتے ہوئے اعلیٰ احکام سے فوری نوٹس لینے کامطالبہ کیا۔
اسلام آباد‘ لاہور‘ کراچی (ایجنسیاں‘ نامہ نگاران) ملک بھر میں بجلی کا شارٹ فال 3 ہزار میگاواٹ تک پہنچ گیا۔ مختلف شہروں اور دیہات میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 16 گھنٹے تک جا پہنچا۔ اتوار کو ترجمان پاور ڈویژن کے مطابق بجلی کی طلب 18500 میگا واٹ جبکہ پیداوار پندرہ ہزار پانچ سو میگا واٹ ہے۔ مختلف شہروں اور دیہی علاقوں میں دو گھنٹے سے لے کر سولہ گھنٹے تک لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے جبکہ زیرو لوڈشیڈنگ والے مزید 588 فیڈرز پر لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے۔ اب زیرو لوڈشیڈنگ والے فیڈرز کی تعداد 5297 سے گھٹ کر 4709 ہوگئی ہے۔ ملک بھر میں خراب فیڈرز کی تعداد 469 ہے 129 فیڈرز پر مرمتی کام کی اجازت دی ہے۔ ڈسکوز کے 34 فیڈرز پر غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے۔ شہری علاقہ میں پانچ جبکہ دیہی میں سات سے آٹھ گھنٹوں تک بجلی بند کی جا رہی ہے علاوہ ازیں کراچی میں اتوار کو چھٹی کے دن بھی بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری رہا۔کے الیکٹرک کا کہنا ہے کہ لوڈ شیڈنگ مجبوری میں کررہے ہیں۔ جب تک پوری گیس نہیں ملتی لو ڈ شیڈنگ ختم نہیں ہو سکتی۔ دن بھر غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا ستم برداشت کرتے شہریوں کو رات کو بھی سکون میسر نہیں۔ پانی کے حصول میں بھی شہریوں کو دشواری کا سامنا ہے۔