مرجاؤنگا، پی ایس پی یا کسی اور جماعت میں نہیں جاؤں گا: فاروق ستار

16 اپریل 2018

کراچی (آئی این پی) متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے بی آئی بی گروپ کے سربراہ فاروق ستار نے کہنا ہے کہ مرجا ئو ں گا لیکن پی ایس پی یا کسی اور جماعت میں شامل نہیں ہوں گا،جیوں گا توایم کیوایم کے لیے اور مروں گا تو ایم کیوایم کے لیے، وفاداریاں تبدیل کرانے کا عمل بہت شدت کے ساتھ شروع کیا گیا ہے، دن رات پی ایس پی کے لوگ فون پر دھمکیاں دیتے ہیں،تاثر دیا جا رہا ہے کہ مستقبل کسی اور کا ہے،کراچی میں شفاف انتخابات کادعوی غلط ہے،چیف جسٹس اور آرمی چیف سے مطالبہ کیا کہ وہ انہیں سیاست سے دور کرنے کا نوٹس لیں۔ ایم کیوایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار نے کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ وفاداریاں تبدیل کرنے کا عمل بہت شدت کے ساتھ شروع کیاگیا ہے۔ دن رات پی ایس پی کے لوگ فون پر دھمکیاں دے رہے ہیں کسی کے ذریعے بلاوا بھیجتے ہیں، 2018کے الیکشن سے کچھ ماہ پہلے ایسا ہو رہاہے، مجھے وقت دیں، میں سپریم کورٹ کے چیف جسٹس سے ملاقات کرناچاہتاہوں۔فاروق ستار نے کہا ہمارے اراکین کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جارہی ہیں۔ غیرمتنازع سیاسی جدوجہدکے باوجود ہم اذیت میں مبتلاہیں۔ تاثردیاجارہاہے کہ پارٹی کے تنازع کی وجہ سے لوگ پارٹی چھوڑکرجارہے ہیں، کیامیں بھی ایم پی اے کے گھروں پرجاکر نظریے، مہاجرشہدا کا واسطہ دوں۔ 38،38سال سیاسی جدوجہد کرنیوالوں کی وفاداریاں تبدیل کرائی جارہی ہیں،اب اس طرح کام نہیں چلیگا، نشاط ضیابھائی کانام چل گیا تھا کہ وہ دوپہر ڈھائی بجے پی ایس پی جوائن کر رہے ہیں، مگر وہ ابھی میرے ساتھ کھڑے ہیں۔ ہم پی ٹی آئی، پی ایس پی اور پیپلزپارٹی سب کے لیے راستہ چھوڑنے کوتیارہیں۔سربراہ ایم کیو ایم پاکستان نے کہا میں آرمی چیف کے پاس بھی جاں گا، جس کیلئے کہیں گے ہم اس کیلیے واک اووردے دیں گے،کراچی میں پتنگ اورایم کیوایم کوزبردستی ختم کیاجارہاہے۔ تنظیمی اختلاف کا بہانہ بنا کر سیاست کی جارہی ہے، بہادرآباد کے ساتھیوں کو بھی سیاست کا چسکا لگا ہواہے، کارکنوں میں پروپیگنڈا کیاجارہاہے کہ میں اراکین کوخودپی ایس پی میں بھجوارہاہوں۔ میں کسی ریاستی ادارے کی ساکھ کومتاثرنہیں کرناچاہتا، فاروق ستار نے کہا میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کانام تولوں گاہی نہیں کیونکہ وہ اپنی حکومت بچانے میں لگے ہیں، آگ لگے بستی میں، عبداللہ رہے اپنی مستی میں۔