الیکشن کمیشن کی ہدایت پر سندھ پولیس میں بھرتی کا عمل روک دیا گیا

16 اپریل 2018

کراچی(کرائم رپورٹر)الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے بھرتیوں پر لگائی جانیوالی پابندی پر فوری عمل درآمد کرتے ہوئے سندھ پولیس میں جاری ریکروٹمنٹ کے عمل کو فی الفور روک دیا گیا ہے تاہم یکم اپریل سے قبل سندھ پولیس میں ریکروٹمنٹ کے لیئے تحریری امتحانات اور انٹرویوز میں کامیاب ہونیوالے امیدوار اس سے مستثنیٰ ہیں۔علاوہ اذیں اس ضمن میں تمام ایڈیشنل آئی جیز ڈی آئی جیز ایس ایس پیز/ایس پیز سندھ کو باقاعدہ مکتوب بھی ارسال کردیئے گئے ہیں۔سینٹرل پولیس آفس سے جاری اعلامیئے کے مطابق سی پی او کی جانب سے نوٹیفائیڈ کردہ ریکروٹمنٹ کمیٹیوں کے سربراہان کوریکروٹمنٹ کے جملہ ریکارڈ کو سربہ مہر کرکے اس حوالے سے باقاعدہ سرٹیفیکیٹس اندرون تین یوم ارسال کرنیکے احکامات بھی جاری کردیئے گئے ہیں۔ دریں اثناء انسپکٹر جنرل آف پولیس سندھ اے ڈی خواجہ کی جانب سے اسپیشل سیکیورٹی یونٹ سندھ پولیس کے 49 افسران وکمانڈوز کی اعلیٰ پیشہ وارانہ مہارت اور کھیلوں کے میدان میں نمایاں کارکردگی کی تعریف کرتے ہوئے انھیں 18,05,000 (اٹھارہ لاکھ پانچ ہزار)روپے نقد انعامات دینے کااعلان۔کمانڈنٹ اسپیشل سیکیورٹی یونٹ مقصود احمد نے آئی جی سندھ کی جانب سے اعلان کے مطابق ایس ایس یو ہیڈکوارٹر میں دربار کے انعقاد کے موقع پرایس ایس یو کے افسران وکمانڈوز میں نقد انعامات تقیسم کیے۔