سنگیانگ : مذہبی انتہا پسندی کا نمایا ں طور پر قلع قمع کر دیا:سینئر چینی اہلکار

16 اپریل 2018

بیجنگ (آئی این پی/شِنہوا)ایک سینئر چینی اہلکار کے مطابق شمالی مغربی چین کے سینگیانگ یغور کے خودمختار علاقے کے بظاہر مستحکم اور زیادہ محفوظ دکھائی دینے کے پیش نظر مذہبی انتہا پسندوں کی در اندازی کا نمایاں طور پر قلع قلمع کر دیا گیا ہے،چین کی عوامی سیاسی مشاورتی کانفرنس کی قومی کمیٹی کے چیئرمین وانگ یانگ نے یہ بیان 10اپریل سے 14اپریل تک سینگیانگ کے دورہ کے دوران دیا ہے،وانگ جو کہ چین کی کمیونسٹ پارٹی کی مرکزی کمیٹی کے سیاسی بیورو کی مجلس قائمہ کے رکن بھی ہیں کہا کہ امن وآمان کی نمایاں بہتری کے پیش نظر سنگیانگ کے تمام نسلی گروپوں کے عوام اور کیڈروں میں کہیں زیادہ احساس تحفظ پایا جاتا ہے،وانگ نے مقامی حکام سے کہا کہ وہ علیحدگی پسندی،دہشتگردی اورانتہا پسندی کی تین قوتوں پر انتہائی دبائو قائم رکھیں اور غلط سوچ کی مخالف کر کے اور انتہا پسندی کے خاتمہ کیلئے جنوبی سنگیانگ میں غربت کا مقابلہ کر کے صیحح نظریے کو سربلند رکھیں۔