اتوار بازاروں میں گرانفروشی‘ متعدد پھل سبزیاں غائب‘ انتظامیہ خاموش تماشائی

16 اپریل 2018

لاہور (خبر نگار) اتوار بازاروں میں گذشتہ روز قیمتوں میں ملا جلا رجحان رہا۔ البتہ لیموں کی قیمت میں ہوشربا اضافہ دیکھنے میں آیا۔ قیمت 230 روپے کلو پہنچ جانے کے بعد بھی لیموں اتوار بازاروں میں دستیاب نہیں تھا۔ کیلا بھی اتوار بازاروں سے غائب تھا۔ سیب بہت کم دستیاب تھے، امرود بھی میسر نہیں تھا جبکہ اتوار بازاروں میں گرانفروشی اور ملا جلا پھل اور سبزیوں کی فروخت کا سلسلہ جاری رہا۔ شہریوں کے احتجاج پر کسی نے کان دھرنا پسند نہیں کیا۔ پھلوں میں سیب کالا کولو 5 روپے کلو کے اضافہ سے 140 روپے کلو ہو گیا۔ دیگر پھلوں میں خربوزہ 8 روپے اضافے سے 48، کینو (اول) 10 روپے اضافہ سے 150، کینو (دوم) 20 روپے اضافہ سے 80، ناریل فی عدد 5 روپے اضافہ سے 110، ناشپاتی 3 روپے اضافہ سے 190 روپے کلو ہو گئے جبکہ سٹابری سپیشل 10 روپے کمی سے 70، چیکو 5 روپے کمی سے 95 اور شکرقندی 3 روپے کمی سے 42 روپے کلو ہو گئی۔ دیگر پھلوں کی قیمت برقرار رہی۔ سبزیوں میں لیموں (دیسی) 40 روپے اضافہ سے 230، لیموں چائنہ 40 روپے اضافہ سے 150، ادرک تھائی لینڈ 15 روپے اضافہ سے 25، پالک 2 روپے اضافہ سے 12، شملہ مرچ 5روپے اضافہ سے 15 روپے ہو گئی جبکہ ٹماٹر 7 روپے کمی سے 30، لہسن برونائی کوئٹہ 5 روپے کمی سے 65، ادرک چائنہ 4 روپے کمی سے 150، بینگن 2 روپے کمی سے 28، کریلے دیسی 10 روپے کمی سے 40، ٹینڈے دیسی 10 روپے کمی سے 90، گوبھی 4 روپے کمی سے 20، گھیا کدو 10 روپے کمی سے 25، گھیا توری 15 روپے کمی سے 40، سبز مرچ 5 روپے کمی سے 50، بھنڈی 20 روپے کمی سے 90، مٹر 10 روپے کمی سے 55 اور گاجر 5 روپے کمی سے 25 روپے کلو ہو گئی۔