پاک ایران تجارت کو فروغ دینے کیلئے کوششیں خوش آئند ہیں: خواجہ حبیب

16 اپریل 2018

لاہور(نیوزرپورٹر)ایران پاک فیڈریشن آف کلچر اینڈ ٹریڈ کے صدرخواجہ حبیب الرحمان نے کہاہے کہ گوادر اور چا بہاد کی بند گاہوں کو ریلوے لنک سے ملانے اور دوطرفہ تجارت کے فروغ کیلئے کشتی سروس شروع کر نے کا فیصلہ خطے کی تقدیر بدل دے گا، جتنی تجارت ایران کیساتھ ہو سکتی ہے کسی اور ملک سے نہیں، منصو بے پر بلاتاخیر عمل درآمد ہو نا چاہیے۔ان خیالات کاظہار انہوں نے ایف پی سی سی آئی کے صدر غضنفر بلور سے ملاقات کے دوران کیا۔دونوں رہنما ئوں کی جانب سے پاکستان اور ایران کے درمیان حکومتی سطح پر تعلقات کے فروغ کیلئے کی جانے والی کوششوں کو سراہا اور مطالبہ کیا گیا کہ پاک ایران ریل تعلقات کو مضبوط بنانے کیلئے1959ء کے معاہدے کو اپ گریڈ کیا جائے۔ انہوں نے کہا کوئٹہ تفتان ٹریک کی بہتری کیلئے ایرانی کمپنیوں کو بی او ٹی کی پیشکش کا مثبت جواب دینا چاہیے۔پا کستان اور ایران کو دوطرفہ تجارت کے فروغ کیلئے کسی بھی ملک کا دبائوقبول کئے بغیر آ گئے بڑھنا چاہیے اور خطے کے معاشی استحکام کیلئے مل جل کر کام کر نا چاہیے جبکہ دوطرفہ تجارت میں اضافے کیلئے ضروری ہے کہ سب سے پہلے بینکنگ سیکٹر پر توجہ دی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکومت نے اپنے نظم وضبط کو خراب کر دیا ہے، اخراجات پوری رفتار سے جاری ہیں جبکہ آمدنی نہ ہونے کے برابر ہے، موجودہ حکومت کو آئندہ مالی سال کا بجٹ پیش نہیں کرنا چاہیے، اگر حکومت ڈیڑھ ماہ قبل بجٹ دے گی تو بجٹ کے لوازمات پورے نہیں کر پائے گی، اکنامک سروے گر ئوتھ ریٹ سمیت دس ماہ کے اعدادوشمار دستیاب نہیں ہوںگے۔