حکومت پنجاب نے گندم خریداری پالیسی برائے 2018 ء کا اعلان کردیا

16 اپریل 2018

اسلام آباد (آن لائن) حکومت پنجاب نے گندم کی خریداری پالیسی برائے 2018 کا اعلان کردیا۔ گندم خریداری کا ہدف 40 لاکھ میٹرک ٹن مقرر کیا گیا ہے جبکہ فی من گندم کی قیمت 1300 روپے مقرر کی گئی ہے۔ باردانہ کیلئے کسانوں سے آج 16 اپریل سے 20 اپریل تک درخواستیں طلب کی گئی ہیں۔ دس ایکڑ گندم کیلئے باردانہ کیبنٹ کمیٹی کی منظوری سے جاری کیا جائے گا۔ صوبائی حکومت کے اعلان کے مطابق باردانے کیلئے آنے والی درخواستوں پر 21 اور 22 اپریل کو سکروٹنی کی جائے گی جس کے بعد تمام ڈپٹی کمشنرز اس کی تشہیر کریں گے۔ 23 اپریل کو کیبنٹ کمیٹی درخواستوں کا جائزہ لے کر اضلاع کی سطح پر باردانے کی تقسیم کا فیصلہ کرے گی۔ جس کے بعد تمام اضلاع میں کسانوں کو بلاتاخیر باردانے کی فراہمی شروع کردی جائے گی۔ جو کہ ایک ماہ تک جاری رہے گا۔ صوبے بھر میں 382 جبکہ ضلع ملتان میں 15 خریداری مراکز قائم کردیئے گئے ہیں۔ کسانوں کو سیکیورٹی کی مد میں 36 سے 65 روپے تک سکیورٹی ادا کرنا ہوگی۔ 4 ایکڑ تک گندم کاشتکاروں کو گریڈ 17 کے کسی بھی آفیسر کی شخصی ضمانت پر بغیر سکیورٹی رقم جمع کرائے باردانے فراہم کئے جائیں گے۔ پالیسی کے تحت نجی خریدار بھی اپنی مرضی سے جتنی چاہیں گندم خرید سکتے ہیں۔ علاوہ ازیں گندم کی بین الصوبائی نقل و عمل پر بھی کوئی پابندی نہیں ہو گی۔