جج کے گھر پر فائرنگ انصاف میں رکاوٹ ڈالنا ہے ، ثروت قادری

16 اپریل 2018

کراچی (نیوز رپورٹر)سر براہ پاکستان سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا ہے کہ جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پرفائرنگ انصاف کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کے مترادف ہے ،فائرنگ کے مجرموں کو فوری گرفتار کرکے انجام تک پہنچایا جائے ،جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ کی شدید مذمت کرتے ہیں ،پاکستان سنی تحریک عدلیہ اور قومی اداروں کے ساتھ ہے آئین کی بالادستی پر یقین رکھتے ہیں،کشمیر ،شام فلسطین اور برما میں مسلمانوں کے ساتھ انسانیت سوز مظالم ڈھائے جارہے ہیں ،شام میں عوام پہلے ہی شامی اور روسی فوج کے کیمیائی حملوں سے پریشان حال تھے کہ اب امریکہ نے بھی شام میں دھاوا بول دیا ہر لحاظ سے شام کو کمزور کیا جارہاے ،شام کے متاثرہ علاقوں میں غذائی اور اور ادویات کی قلت ہے ،اقوام متحدہ شام میں جارحیت پر خاموش اور بے بس ہے ،او آئی سی اور مسلم ممالک نے ہوش کے ناخن نہیں لئے تو آج شام بربریت کا نشانہ ہے تو کل کسی اور کا بھی نمبر آسکتا ہے ،یہود ونصاریٰ پوری طاقت اور سازش کے ساتھ مسلمانوں کو تقسیم کرکے پوری دنیا پر بادشاہت کرنا چاہتے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکز اہلسنت پر ملیر اور اورنگی ٹائون سے آئے ہوئے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ،ثروت اعجاز قادری کہا کہ مسلمانوں کے اتحاد کی جتنی ضرورت آج ہے شاید پہلے کبھی نہ تھی ،انہوں کا کہنا تھا کہ مسلم ممالک پر بربریت اور مسلمانوں کی نسل کشی کے پیچھے امریکہ اور اس کے حواریوں کا ہاتھ ہے ،پاکستان اسلام کا قلعہ اور اس قلعے کو مضبوط ومستحکم بنانے کیلئے عوام یکجا ہیں ،پاک فوج کی ملک کیلئے دی جانیوالی قربانیوں پر پوری قوم کو فخر ہے ،پاک فوج کا کردار مثالی ہے ،انشاء اللہ بہت جلد پاکستان سے دہشتگردی کا مکمل خاتمہ ہوجائیگا ۔