جعلی دستاویزات میں ملوث بین الصوبائی گروہ کا افغان سرغنہ گرفتار

16 اپریل 2018

پشاور(بیورورپورٹ)پشاور پولیس نے وزارت داخلہ کی جعلی دستاویزات، زمین کے جعلی انتقالات اور جعلی ڈی ایم سیز بنانے میں ملوث بین الصوبائی منظم گروہ کے افغان سرغنہ کو گرفتار کرکے اس کے قبضے سے بڑی تعداد میں جعلی دستاویزات اور آلات برآمد کرلئے۔سی سی پی پشاور محمد طاہر خان کوخفیہ ذر ائع سے اطلاع موصول ہوئی کہ تھانہ تہکال کی حدو د گل حاجی پلازہ میں ایک گروہ مختلف طریقوں سے وزارت داخلہ کے جعلی کاغذات ،جعلی زمین سرٹیفکیٹ اور افغان سٹیزن کارڈ بنواتا ہے اس اطلاع پر سی سی پی پشاور محمد طاہر خان نے نوٹس لیتے ہوئے ایس ایس پی آپریشنز جاوید اقبال کی نگرانی میں ایس پی کینٹ وسیم ریاض کی قیادت میں ایک ٹیم تشکیل دی جس نے بر وقت کارروائی کر تے ہوئے گل حاجی پلازہ دکان نمبر 222 دوسری منزل پر چھاپہ لگا کر گروہ کے ایک اہم رکن غلام مصطفی ولد غلام رسول سکنہ افغانستان حال فیز 3 حیات آبادکو گرفتار کر لیا جس کے قبضے سے جعلی دستاویزات، جعلی انٹیرئر منسٹری کے کاغذات ،جعلی ڈی ایم سیز،جعلی زمین سرٹیفکیٹ، افغان سٹیزن کارڈ اور جعلی دستا ویزات بنانے کے آلات ایک کمپیوٹر ،ایک عدد ایل سی ڈی سکرین اورایک عدد پرنٹر بھی برآمد کرلیا، ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کردی گئی ہے۔سی سی پی او محمد طاہر خان نے کہا کہ عوام کے تعاون اور نشاندہی کی بدولت معاشرے سے ایسے جرائم کا خاتمہ ممکن ہے۔