عدلیہ کو دبائو میں لینے کے ہتھکنڈے کبھی کامیاب نہیں ہوسکتے‘ ضیا عباس

16 اپریل 2018

کراچی(اسٹاف رپورٹر) سینئر سیاستدان اورمسلم لیگ کے سابق سیکرٹری جنرل سید ضیاء عباس نے کہا ہے کہ عدلیہ کو دبائو میں لینے کے مذموم ہتھکنڈے کبھی کامیاب نہیں ہوسکتے۔ پوری قوم آزاد عدلیہ کے ساتھ اور انصاف کے لئے اس کی طرف دیکھ رہی ہے۔ انہوں نے پانامہ کیس کے بنچ میں شامل اور احتساب عدالت میں دائر ریفرنس کے نگراں جج جسٹس اعجاز الحسن کی رہائش گاہ پر فائرنگ کی شدید ترین الفاظ میں مذمت کی اور کہا کہ اپنے خلاف آنے والے عدالتی فیصلوں پر دھمکیاں دینے والے اپنی اصلیت پر اترآئے ہیں۔ ماضی میں سپریم کورٹ پر حملہ کیا گیا اور آج کھلم کھلا ججوں کو دھمکیاں دی جارہی ہیں اور ان کے گھروں پر فائرنگ کی جارہی ہے۔ سیدضیاء عباس نے کہا کہ اب یہ کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں رہی کہ پاکستان میں گاڈ فادر اور سسلین مافیا کون ہے۔ انہوں نے کہا کہ جسٹس اعجاز الحسن کے گھر پر فائرنگ کے بعد اس مافیا کو مکمل طور پر بے نقاب کرنے کی ہی نہیں بلکہ آہنی ہاتھوں کے ساتھ کارروائی کی بھی ضرورت ہے۔ اس کے ساتھ ہی سید ضیاء عباس نے جسٹس اعجاز الحسن سمیت اعلیٰ عدلیہ کے تمام ججوں اور جے آئی ٹی ارکان کو اعلیٰ ترین سیکیورٹی فراہم کرنے پر بھی زور دیا۔