ڈرگ کورٹ میں چیئرمین کے تقرر کا فیصلہ کیا جائے

16 اپریل 2018

مکرمی!گوجرانوالہ پاکستان کا سب سے بڑا ڈویثرن ہے ۔جو چھ صنعتی وزرعی لحاظ سے اہم اضلاع پر مشتمل ہے ۔ڈویثرن کیلئے ایک ڈرگ کورٹ موجود ہے جو اپنا کام احسن طریقے سے کررہی تھی کہ تین ماہ قبل اس کے چیئر مین رضائے الہی سے وفات پاگئے ۔اس کے بعد سے آج تک اتنا عرصہ گذرنے کے باوجود کسی جج کو چیئر مین مقرر نہیں کیا گیا۔جس سے ایسے سینکڑوں میڈیکل سٹورجنہیں دوران معائنہ سربمہر کردیا گیا تھاکوئی فیصلہ نہ ہونے کے سبب ان میں موجود کروڑںروپے کی ادویات زائدالمیعاد ہوچکی ہیں ۔سائلیں کو دکانوں کاکرایہ اس سے الگ برداشت کرنا پڑ رہا ہے ۔اب خداخدا کرکے جیلوں میں پڑے دکانداروں کی ضمانتوں کے فیصلے تو ضلعی سیشن جج صاحب کررہے ہیںمگر اصل مسئلہ وہیں موجود ہے کہ سربمہر کیئے ہوئے میڈیکل سٹورز میں روزانہ کی بنیاد پر ادویات خراب ہورہی ہیں۔خاص طور پرلوڈشیڈنگ کے دوران جان بچانے والی ادویات اور انسولین تباہ ہورہی ہیں۔ایسے میں بہتر ہوگا کہ چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ یا وفاقی وزارت قانون اس مسئلے کا حل جلد تلاش کرکے گوجرانوالہ ڈویثرن کی ڈرگ کورٹ میں چیئر مین کاتقرر کریں۔ویسے بھی وفاقی وزیر قانون جوکہ گوجرانوالہ بار کے سابق صدر ہیں انہیں اس معاملے میں خاص طورپر کوششیں کرنا چاہیں۔(سلمان کھوکھر ایڈووکیٹ، گوجرانوالہ)