حکومت رواں سال کیلئے مقررہ 6 فیصد گروتھ ریٹ حاصل کرنے میں ناکام

16 اپریل 2018

رواں سال کے لئے 6 فیصد گروتھ ریٹ حاصل نہیں کیا جا سکا۔ سالانہ منصوبے کی رابطہ کمیٹی کا اجلاس آج طلب کرلیا گیا۔ مجموعی ترقیاتی منصوبوں کی منظوری دی جائے گی۔
رواں مالی سال کے لئے ملک کا جی ڈی پی گروتھ ریٹ 6 فی صد مقرر کیا گیا تھا مگر حاصل شدہ اعدادوشمار بتا رہے ہیں کہ حکومت مقررہ گروتھ ریٹ حاصل کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکی۔ حوصلہ افزا بات یہ ہے کہ رواں مالی سال میں حاصل ہونے والے گروتھ ریٹ کی شرح 5.79 فی صد ہے جو مقررہ ریٹ سے کچھ ہی کم ہے تاہم گزشتہ دس برسوں کے مقابلے میں یہ شرح بلند ترین ہے۔ آج سالانہ منصوبہ بندی کی رابطہ کمیٹی کا اجلاس بھی ہورہا ہے جس میں اس صورتحال پر غور کرتے ہوئے نئے آئندہ مالی سال کے لئے ترقیاتی منصوبوں کی منظوری دی جائے گی۔ وفاقی ترقیاتی منصوبے کے لئے 750 ارب روپے کی وزارت خزانہ منظوری دے چکی ہے جبکہ وزارت منصوبہ بندی اس سے زیادہ رقم مختص کرانا چاہتی ہے۔ رابطہ کمیٹی کے اجلاس سے نئے ترقیاتی منصوبوں کے لئے مختص رقم کی بعد ازاں قومی اقتصادی کونسل سے منظوری لی جائے گی۔ ملک کے سالانہ گروتھ ریٹ کے حصول کے قریب کی شرح حاصل کرنا حکومت کی گڈ گورننس اور ترقیاتی منصوبوں کی بروقت تکمیل کے سبب ہی ممکن ہوسکا ہے۔یہ الیکشن کا سال ہے اگر تمام ادارے مزید محنت سے کریں تو اس کے بہتر نتائج چند ماہ میں بھی برآمد ہو سکتے ہیں۔