عام انتخابات قریب‘ الیکشن کمشن میں قائم مقام افسران سے کام چلانا سوالیہ نشان؟

16 اپریل 2018

اسلام آباد(قاضی بلال)الیکشن کمیشن کے مستقل صوبائی چیف الیکشن کمشنر بلوچستان بھی ریٹائرہوگئے جس کے بعدچاروں صوبوں میںاب قائم مقام چیف الیکشن کمشنر کام کریں گے ۔ بلوچستان کے صوبائی چیف الیکشن کمشنر نعیم اقبال جعفر ریٹائر ہوگئے ہیں ۔ ان کی جگہ پر نیاز احمد بلوچ کو بلوچستان کا چیف الیکشن کمشنرکا عارضی چارج دیا گیا ہے ان کی تقرری تین ماہ کیلئے کی گئی ہے اور جب تک نیا صوبائی چیف الیکشن کمشنر نہیںآئے گا اس وقت تک یہ کام کرتے رہیںگے ۔ گریڈ بیس کی سیٹ پر نیاز احمد بلوچ کو قائم مقام مقرر کیا گیا ہے ان کی ریٹائرڈ منٹ بھی دسمبر ہوگی ۔ الیکشن کمیشن میں بروقت ترقیاں نہ ہونے کی وجہ سے اب تک گریڈ اکیس کی دس پوسٹوں میں سے صرف تین پر افسر موجود ہیں جبکہ سات پوسٹیں خالی پڑی ہوئی ہیں ۔ موجودہ سیکرٹری الیکشن کمیشن جن کی مدت ملازمت میں توسیع ہوئی تھی وہ بھی عام انتخابات کرانے کے بعد ستمبر میں ریٹائر ہو جائیں گے انہوں نے الیکشن کمیشن ملازمین کی بجائے اہم عہدوں پر باہر سے افسران کو ڈیپوٹیشن پر تعینات کیا ہے ۔ عام انتخابات قریب ہونے کے باوجود الیکشن کمیشن میں افسران کی خالی نشستوں پر تربیت یافتہ افسران کو تعینات نہیں کیا گیا ہے یہی وجہ ہے اب پنجاب میں شریف اللہ ¾ کے پی کے میں پیر مقبول ¾ سندھ میںیوسف خان خٹک اور اب بلوچستان نیاز احمد بلوچ کو قائم مقام چیف الیکشن کمشنر لگا دیا گیا ہے ۔ ان تمام کی ترقیاںدینے کی بجائے ان کو اضافی چارج دیدیئے گئے ہیں ۔
ترجمان الیکشن کمشن ہارون شنواری نے کہا ہے الیکشن کمشن میں جو افسران کام کررہے ہیں‘ انہیں 30,30 سال کا تجربہ ہے۔ انہیں قائم مقام لگانے سے فرق نہیں پڑے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ الیکشن کمشن میں ترقیاں میرٹ اور قواعد کے مطابق کی جاتی ہیں۔

قائم مقام افسران