رائیونڈ: 25 کروڑ کی اراضی کا جعلی انتقال: پولیس کا مقدمہ درج کرنے سے گریز

15 ستمبر 2015

لاہور (خبرنگار) رائیونڈ میں 25 کروڑ روپے سے زائد مالیت کی 153 کنال 16 مرلے زمین جعلی فرد انتقال کے ذریعے اپنے نام کرانے والے ملزموں کے خلاف لاہور پولیس نے مقدمہ درج کرنے سے ’’گریز‘‘ کی پالیسی اپنا لی ہے۔ فروری 2015ء میں تحصیلدار عمران صفدر اور اگست میں سب رجسٹرار نشتر ٹائون سید اسد عباس کی ملزموں کے خلاف درخواستوں پر بالترتیب تھانہ رائیونڈ اور تھانہ نصیر آباد نے مقدمہ درج نہیں کیا۔ ذرائع کے مطابق تحصیلدار عمران صفدر کو فروری 2015ء میں پتہ چلا کہ موضع رائی تحصیل رائیونڈ کی 153 کنال 16 مرلے زمین کی 3 جعلی فرد ملکیت حسین بخش ولد گلزار نامی شخص نے بنوائی ہے جس پر تحصیلدار نے تھانہ رائیونڈ کو ملزم حسین بخش کے خلاف مقدمہ کیلئے لکھا مگر ابھی تک مقدمہ درج نہیں کیا گیا۔ عمران صفدر کے ریفرنس پر سب رجسٹرار نشتر ٹائون سید اسد عباس نے مزید انکوائری کرائی تو پتہ چلا کہ ملزم حسین بخش نے موضع رائی کی کھیوٹ نمبر 224 اور کھیوٹی نمبر 448 کی 3 جعلی فرد انتقال تیار کرائیں جو بالترتیب 99 کنال گیارہ مرلے، 22 کنال 9 مرلے اور 31 کنال 16 مرلے کی ہیں اور یہ سرکاری زمین ساجد آفریدی ولد کوچ محمد کو فروخت کی جا رہی ہے۔ سب رجسٹرار نشتر ٹائون نے 25 اگست کو تھانہ نصیر آباد کومقدمہ درج کرنے کے لئے کہا مگر اس نے بھی نہیں کیا۔