بنکاک دھماکے میں ملوث ہونے کا شبہ ایک پاکستانی، 2 ملائیشین شہری گرفتار مرکزی ملزم ترکی فرار ہو گیا: پولیس

15 ستمبر 2015

کوالالمپور‘بنکاک(این این آئی+بی بی سی) ملائیشین پولیس نے بنکاک کے مندر میں گذشتہ مہینے ہونے والے دھماکے میں ملوث ہونے کے الزام میں ایک پاکستانی اور 2 ملائیشین شہریوں کو حراست میں لے لیا ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق انسپکٹر جنرل خالد ابو بکر نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ تھائی انتظامیہ کی جانب سے ملنے والی خفیہ اطلاع کے بعد تینوں افراد کو چند روز قبل حراست میں لیا گیا۔ انھوں نے بتایا کہ حراست میں لیے گئے ملائیشین افراد میں ایک خاتون بھی شامل ہیں۔خالد ابو بکر نے اس حوالے سے مزید تفصیلات فراہم نہیں کیں کہ ان افراد کو ملائیشیا میں کہاں سے حراست میں لیا گیا تاہم انہوںنے کہاکہ ملائیشین پولیس اس معاملے کی تفتیش کریگی اور حراست میں لیے گئے افراد سے متعلق تھائی انتظامیہ کے ساتھ مل کر کام کرے گی۔ واقعہ میں ملوث 2 مشتبہ ملزم پہلے ہی تھائی لینڈ میں پولیس کی حراست میں ہیں جن پر غیر قانونی دھماکا خیز مواد رکھنے کا الزام ہے۔تھائی لینڈ کے پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ملک کے دارالحکومت بینکاک میں ہونے والے بم دھماکے میں ملوث کلیدی ملزم ترکی فرار ہوگیا ہے۔پولیس کا خیال ہے کہ چین کے صوبے سنکیانگ سے تعلق رکھنے والے 27 سالہ عبدلستائر عبدالرحمان عرف ایشان بنکاک میں ہونے والے دھماکے کا ماسٹر مائنڈ ہے اور وہ اس وقت ترکی کے درالحکومت استنبول میں موجود ہے۔