ایون فیلڈ ریفرنس:جے آئی ٹی رپورٹ کوعدالتی ریکارڈ کا حصہ نہ بنانے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

15 مارچ 2018 (12:17)

سابق وزیراعظم نواز شریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن(ر)صفدر کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت کے دوران احتساب عدالت نے پاناما جے آئی ٹی کی مکمل رپورٹ بطور شواہد عدالتی ریکارڈ کا حصہ نہ بنانے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔احتساب عدالت کے جج محمد بشیر شریف خاندان کے خلاف نیب ریفرنس پر سماعت کی ۔سماعت کے دوران جے آئی ٹی کی مکمل رپورٹ بطور شواہد عدالتی ریکارڈ کا حصہ نہ بنانے کی درخواست پر مریم نواز کے وکیل امجد پرویز اور ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب سردار مظفر عباسی کے دلائل مکمل ہوگئے، جس کے بعد عدالت نے فیصلہ محفوظ کرلیا۔دوسری جانب احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کو حاضری کے بعد جانے کی اجازت دے دی، تاہم نواز شریف اور مریم نواز نے عدالت کی جانب سے حاضری لگا کر جانے کی اجازت ملنے کے باوجود واپس جانے سے انکار کر دیا۔