ایران‘ پاکستان گیس پائپ لائن منصوبے کی تکمیل سے تعلقات مضبوط ہونگے: بہرام قاسمی

15 مارچ 2018

تہران (صباح نیوز)ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی نے کہا مشرق وسطیٰ کی اہمیت کے پیش نظر ایران خطے کی سلامتی کے تحفظ کے لیے اپنا فطری کردار ادا کر رہا ہے۔ ٹرمپ کی تازہ دھمکیوں کے بارے میں کہا کہ شاندار ماضی اور عظیم تہذیب و تمدن کا حامل ایران، پوری دنیا میں مثبت کردار ادا کر رہا ہے۔واضح رہے کہ ٹرمپ نے کیلی فورنیا کی فوجی چھائونی میں خطاب کرتے ہوئے کہا تھا ایران ہی مشرق وسطیٰ کی تمام مشکلات کی جڑ ہے۔ ترجمان نے واضح کیا کہ شام میں ایران کی فوجی مشاورت بھی اس ملک کی سلامتی اور استحکام میں معاونت کے لیے ہے اور ہمیں امید ہے کہ شام کا بحران جلد از جلد حل ہو جائے گا۔ خطے کی سیکورٹی اور استحکام کو یقینی بنانے کے لیے اجتماعی کوششوں کی ضرورت ہے لیکن افسوس خطے کے بعض ممالک نہ صرف علاقائی استحکام میں مدد نہیں کر رہے بلکہ بیرونی طاقتوں سے اپنی سلامتی کی بھیک مانگتے دکھائی دیتے ہیں۔16مارچ کو ویانا میں ایٹمی معاہدے کے بارے میں ہونے والے مشترکہ کمشن کے اجلاس کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اس اجلاس میں فریق مقابل منجملہ امریکہ کی وعدہ خلافیوں اور اس کی پیدا کردہ مشکلات کا جائزہ لیا جائے گا۔ آذربائیجان کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ آذربائیجان خطے میں ایران کا اہم ہمسایہ ملک ہے اور ایران کے وزیر خارجہ کے دورے سے خطے میں امن و امان کی صورت حال کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں علاقائی ملکوں کے درمیان تعاون کی ضرورت پر زور دیا۔ امریکہ اور شمالی کوریا کے درمیان براہ راست مذاکرات کے بارے میں کہا کہ ایران، دنیا میں امن کی ہر کوشش کی حمایت کرتا ہے لیکن یہ بات عملی طور پر ثابت ہو گئی ہے کہ امریکہ کی باتوں اور وعدوں پر ہرگز کوئی اعتماد نہیں کیا جا سکتا۔بہرام قاسمی نے ایران پاکستان گیس پائپ لائن منصوبے کے بارے میں کہا وزارت خارجہ اقتصادی تعاون کو فروغ دینے کی کوشش کر رہی ہے اور گیس پائپ لائن منصوبے کی تکمیل سے علاقے کے ملکوں کے درمیان تعلقات کو مضبوط بنانے میں مدد ملے گی۔