این اے 125انتخابی عذر داری کیس، حامد خان کے وکیل کے دلائل مکمل

15 مارچ 2018

اسلام آباد(نمائندہ نوائے وقت)سپریم کورٹ نے این اے 125انتخابی عذرداری کیس کی سماعت تحریک انصاف کے امیدوار حامد خان کے وکیل کے دلائل مکمل، عدالت نے آئندہ سماعت پر سعد رفیق کے وکیل کو دلائل دینے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت پیر تک ملتوی کردی ۔ بروز بدھ کیس کی سماعت جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کی ۔دوران سماعت تحریک انصاف کے وکیل نے کہا ایک پولنگ اسٹیشن میں پریذائیڈنگ افسر نے انتخابی نتیجے پر دستخط ہی نہیں کیے اس پر جسٹس عظمت سعید نے کہا ہوسکتا ہے پریذائیڈنگ افسر کو دستخط کرنا نہ آتے ہوں ،ریکارڈ کے تو حالات اچھے نہیں ہیں۔حامد خان کے وکیل نے کہا تمام ریکارڈ جعلی تیار کیا گیا ہے،آر او نے تسلیم کیا کہ تھیلے کھولے بغیر نتائج مرتب کیے،بتایا گیا کہ پولنگ عملہ نے انگوٹھے کے نشان لگوا لیے لیکن بیلٹ پیپر نہیں دیے،بیس پولنگ اسٹیشنز پر سو فیصد پولنگ ہوئی،پولنگ اسٹیشن نمبر 99 پر ووٹنگ سو فیصد سے بھی زیادہ ہوئی۔ تحریک انصاف کے رہنما حامد خان کے وکیل نے دلائل مکمل کر لیے ۔آئندہ سماعت پر سعد رفیق کے وکیل( خواجہ حارث ) جواب الجواب دلائل دیں گے ۔