سفارتکاروں کو ہراساں کرنا سفارتی آداب کے خلاف ،بھارت سکیورٹی کو یقینی بنائے : خرم دستگیر

15 مارچ 2018

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر+آن لائن)ائرچیف مارشل سہیل امان نے گزشتہ روز وزیر دفا ع انجینئر خرم د ستگیر سے الو ادعی ملا قات کی۔ وزیر دفاع نے سبکدوش ہونے والے چیف آف ایئر سٹاف کی خدمات کو سراہا۔وفا قی وزیر نے ایئرچیف مارشل کو دفاع کو مضبو ط اور جدید بنانے اور پاک فضائیہ کی صلا حیتوں کو بڑھانے میں انکے کر دار کی تعریف کی چیف آف ایئرسٹاف سے گفتگو کرتے ہوئے وفا قی وزیر نے کہا کہ حکومت مسلح افواج کی صلا حیتوں میں اضافہ اور ان کو مضبو ط بنانے کیلئے تما م ضرور ی اقدامات کر رہی ہے تاکہ وہ درپیش چیلجز سے نبر دآزما ہوسکیں اور ملکی سر حدو ں پر فول پروف دفاع کو یقینی بنائیں ۔علاوہ ازیں وفاقی وزیر دفاع خرم دستگیر نے بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں پاکستانی سفارتکاروں کے اہل خانہ اور بچوں کو ہراساں کرنے پر شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا بھارتی وزارت خارجہ سے متعدد بار احتجاج کے باجود ناخوشگور واقعات کا سلسلہ جاری ہے۔ بھارتی حکومت اپنی ذمہ داری کا احساس کرے اور پاکستانی سفارتکاروں اوران کے اہل خانہ کی سکیورٹی کو یقینی بنائے۔میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارتی دارالحکومت میں موجود پاکستانی سفارتکاروں اور ان کے اہل خانہ اور بچوں کو ہراساں کرنا سفارتی آداب کے خلاف ہے۔ بھارتی سرکار اپنی ذمہ داری کا احساس کرے۔