سیاستدانوں کو بدنام کرنے کیلئے جوتے مروائے جا رہے ہیں‘ عثمان کاکڑ

15 مارچ 2018

اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی) پختون خواہ ملی عوامی پارٹی کے سینیٹر عثمان کاکڑ نے کہا ہے پہلے مسلم لیگ (ن) کی قیادت اور صدارت میاں نواز شریف کے پاس تھی اور وہ اپنے آپ کو قائداعظم ثانی کہتے تھے جبکہ اب مسلم لیگ کی صدارت میاں شہباز شریف کے پاس ہیں اب وہ قائداعظم ثانی ہوگئے ہیں۔ بدھ کے روز پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عثمان خان کاکڑ نے کہا کہ جب دلیل کی جنگ انسان ہار جاتا ہے تو وہ گالی گلوچ اور لڑائی جھگڑے پر اتر آتا ہے۔ سیاستدانوں کو بدنام کرنے کے لئے جوتیاں مروائی جارہی ہیں۔ اس سے وہ قوتیں سیاستدانوں کو غیر مقبول نہیں کرسکتیں اور نہ ہی کوئی غیر مقبول ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جب تک جزا اور سزا کا عمل نہیں ہوگا اور قانون کی پابندی نہیں ہوگی اس وقت تک ملک میں کوئی قانون کی عزت نہیں کرے گا۔ ملک کی اشرافیہ‘ حکمران‘ بااثر طبقات قانون کو اپنے پائوں تلے روندنے کو فخر محسوس کرتے ہیں۔ وہ قانون کا مذاق اڑاتے پھر رہے ہیں لیکن کوئی انہیں پوچھنے والا نہیں جبکہ غریب عوام کے معاملے میں قانون فوراً حرکت میں آجاتا ہے۔

نفس کا امتحان

جنسی طور پر ہراساں کرنے کے خلاف خواتین کی مہم ’می ٹو‘ کا آغاز اکتوبر دو ...