نیشنل ہائی وے اتھارٹی سمیت مختلف وفاقی اداروں کے سوا لاکھ ملازمین کی نوکریاں خطرے میں پڑ گئیں

15 مارچ 2018

کراچی (علی عباس) نیشنل ہائی وے اتھارٹی سمیت مختلف وفاقی اداروں کے سوا لاکھ ملازمین کی نوکریاں خطرے میں پڑ گئیں اور ملازمتیں بچانے کیلئے سب سے پہلے این ایچ اے کے ملازمین میدان میں آگئے۔ بدھ کو انہوں نے ہیڈ آفس پر مظاہرہ کیا اور این ایچ اے کی انتظامیہ کے خلاف نعرے بازی کی۔ مظاہرین نے الزام لگایا کہ این ایچ اے انتظامیہ2011 ءمیں مستقل کیئے جانے والے 32 سو ملازمین کو برطرف کرنا چاہتی ہے جبکہ جنرل منیجر عبدالطیف نے نوائے وقت کے استفسار پر بتایا کہ کسی ملازم کو نکالا نہیں جا رہا بلکہ عدالت کے حکم پر انکوائری کی جا رہی ہے اور اس بات کا جائزہ لیا جا رہا ہے کہ ان کی ریگولرائزیشن میرٹ پر تھی۔ ریگولرائزیشن کی چھان بین اس لئے کی جا رہی ہے کہ دوسرے ملازمین عدالت میں چلے گئے ہیں اس قسم کی مشق پورے ملک میں ہو رہی ہے۔ دوسری جانب مظاہرین کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت بلوچستان اور سینیٹ میں شکست کا بدلہ این ایچ اے کے32 سو ملازمین کو برطرف کرکے لینا چاہتی ہے جن میں گریڈ ایک سے گریڈ19- کے ملازمین شامل ہیں
نوکریاں خطرے