سابق سیکرٹری خزانہ بلوچستان مشتاق رئیسانی کی درخواست ضمانت مسترد

15 مارچ 2018

اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) سپریم کورٹ نے بلوچستان کے سابق سیکریٹری خزانہ مشتاق رئیسانی کی درخواست ضمانت مسترد کرتے ہوئے ٹرائل کورٹ(احتساب عدالت) کو تین ماہ میں کیس کا فیصلہ کرنے کا حکم جاری کردیا ہے۔جسٹس اعجازافضل کی سربراہی میں تین رکنی بینچ کروڑوں روپے کی کرپشن میں ملوث نیب کے ملزم سابق سیکرٹری خزانہ بلوچستان مشتاق رئیسانی کی درخواست ضمانت کی سماعت کی تو جسٹس اعجازافضل نے کہا کہ ملزم التواء نہ لیتا تو ٹرائل مکمل ہو چکا ہوتا،نیب پراسیکیوٹرنے کہا کہ مشتاق رئیسانی کے گھر سے کروڑوں روپے برآمد ہوئے تھے، ملزم کے وکیل نے کہا کہ نیب نے جتنی رقم کا الزام لگایا اس سے زیادہ ریکوری کر لی، جسٹس مقبول باقرنے کہا کہ ہو سکتا ہے نیب جو باقی رقم کا علم ہی نہ ہو، عدالت نے سابق سیکرٹری خزانہ بلوچستان مشتاق رعیسانی کی درخواست ضمانت خارج کرتے ہوئے ہدایت کی کہ نیب تین ماہ میں ٹرائل مکمل کرے ۔