عدلیہ اور فوج پر بلاجواز تنقید کیوں؟

15 مارچ 2018

مکرمی! ستر سال سے پاکستانی عوام کو نہ تو انصاف ملا نہ کسی نے مظلوم کی فریاد سنی اصل ڈگریوں والے ذلیل و خوار جعلی ڈگریوں والوں کی موج بہار غریب اور امیر میں ایک جیسا برتائو نایاب ہو گیا۔ عام لوگ انصاف کے لئے مرکزی اور صوبائی اداروں کے چکر لگا لگا کر یا تو تھک ہار کر چپ سادھ رہے تھے یا پھر خودکشیاں کر رہے تھے۔ آخر کار لوگوں نے چیف جسٹس اور چیف آف آرمی سٹاف کو آواز دینا شروع کی تو مکافات عمل شروع ہو گیا اور مکافات عمل خدا کی طرف سے ہوتا ہے۔ جسے انسان نہیں روک سکتا سیاسی لیڈروں کو چاہئے کہ وہ عدلیہ اور آرمی پر تنقید کرنے کی بجائے ان کا شکریہ ادا کریں کہ جو کام وہ 70 سال میں نہ کر سکے وہ یہ ادارے کر رہے ہیں اللہ سے دعا ہے کہ وہ انہیں اپنی حفاظت میں رکھے (آمین)(مرزا عبدالمجید ہمایوں گلی ناز سینما وریام روڈ ٹوبہ ٹیک سنگھ)