چیئرمین نادرا کے میگا سینٹرز پر چھاپے‘ 2 ڈائریکٹر برطرف‘4 انچارج معطل

15 مارچ 2018

کراچی (سید شعیب شاہ رم) چیئرمین نادرا عثمان مبین عوامی مسائل کے حل کیلئے ایک بار پھر متحرک، منگل اور بدھ کی درمیانی شپ کراچی کے مختلف سینٹرز کا ہنگامی دورہ کیا۔ عثمان مبین نے نادرا سینٹرز پر عوام کے مسائل سنے اور موقع پر ہی احکامات جاری کئے۔ نادرا افسران کی جانب سے چیئرمین کے گزشتہ دورے پر جاری احکامات کو ہوا میں اڑانے پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سائلین اللہ تعالیٰ کے مہمان ہوتے ہیں اس سے ایسا سلوک قطعی طور پر برداشت نہیں کیا جاسکتا۔ عثمان مبین نے عوامی شکایات پر چار میگا سینٹرز کے انچارج کو معطل کرتے ہوئے محکمہ جاتی کارروائی کی ہدایت کی ۔ معطل افسران میں لانڈھی، کورنگی، شاہ فیصل کالونی اور ملیر سینٹرز سے تعلق رکھنے والے غلام مصطفی، آصف غنی، شہزاد یوسف، اور بابر معین شامل ہیں۔ چاروں افسران کی معطلی کا باقاعدہ حکم نامہ جاری کردیا گیا۔ دوسری جانب چیئرمین نادرا نے رات 2بجے ڈیفنس میگا سینٹر کا دورہ کیااور عملے کے خلاف عوامی شکایت کی بھرمار پر تینوں شفٹوں پر مامور تمام عملے کو تبدیل کرکے نئے عملے کو تعینات کردیا۔ نئے تعینات عملے نے چارج سنبھالتے ہوئے کام شروع کردیا۔ چیئرمین نادرا کی عوامی مسائل کے حل کیلئے احکامات جاری کرنے پر عوام نے عثمان مبین کے اقدامات کو سراہا اور ان کا شکریہ ادا کیا۔ چیئرمین نادرا عثمان مبین نے دو ہفتوں کے دوران کراچی کا دوسرا ہنگامی دورہ کیا جس میں عوامی مسائل اور شکایات جوں کی توں پانے پر کارروائی کرتے ہوئے 2ڈائریکٹرز کو ملازمت سے فارغ کردیا۔ جبکہ شہریوں کے مشکلات کے ازالہ کیلئے اعلیٰ کارکردگی کے حامل افسران کو اسلام آباد سے کراچی طلب کرتے ہوئے اہم فرائض سونپ دیئے۔ چیئرمین نادرا کے احکامات کے تحت کرنل(ریٹائرڈ) میر عجم خان درانی ڈائریکٹر جنرل سندھ، کرنل(ریٹائرڈ)محمد انیس خان ڈائریکٹر جنرل ایچ آر پول اسلام آباد، کرنل(ریٹائرڈ)تیمور سعید راٹھور ڈائریکٹر میگا سینٹرز،کرنل(ریٹائرڈ)سہیل محمودڈائریکٹر آپریشن تعینات کردیا۔ مزید برآں نادرا ہیڈ کوارٹر اسلام آباد سے ڈپٹی ڈائریکٹر کو بھی کراچی طلب کر لیا، چیئرمین نادرا نے نئے ڈی جی اور ٹیم کو دو ماہ کے اندر کراچی میں عوام کو درپیش مسائل حل کرنے کا مینڈیٹ دیتے ہوئے کہا کہ عوامی مشکلات پر زیرو برداشت کی پالیسی پر عمل پیرا ہوں گے۔ عوام نے چیئرمین نادرا کے بھرپور اقدامات پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ اگر ایسے اقدامات تمام اداروں کے سربراہان کریں تو ملک میں مسائل جلد حل ہو سکتے ہیں۔
عثمان میمن/ نادرا