چیف جسٹس سے اپیل کروں گا نیب کا دہرا معیار کیوں? اس پر ازخود نوٹس لیں,راؤانوارکومقدمات کاسامنا کرناچاہیے:شرجیل میمن

15 فروری 2018 (12:01)

محکمہ اطلاعات کرپشن کیس کی سماعت کراچی کی احتساب عدالت میں ہوئی . سابق وزیراطلاعات احتساب عدالت میں پیش ہوگئے۔سابق وزیر کو سخت سیکیورٹی میں احتساب عدالت میں پیش کیا گیا. اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شرجیل میمن نے کہا کہ میں چیف جسٹس سے اپیل کروں گا کہ نیب کا دہرا معیار کیوں ہے اس پر ازخود نوٹس لیں۔شرجیل میمن نے الزام عائد کیا کہ میں جب ملک سے باہر تھا تو میرا نام ای سی ایل میں شامل کیا گیا، جبکہ شریف خاندان پاکستان میں ہونے کے باوجود قانون سے بالاتر کیوں ہیں۔اس موقع پر سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار کو مخاطب کرتے ہوئے شرجیل میمن نے کہا کہ اب سوال چوہدری نثار سے بنتا سے ہے ان کی قیادت کانام ای سی ایل میں ڈالا جائے یا نہیں، خود ساختہ ایماندار چوہدری نثار بولیں اب کیا بولتے ہیں۔سابق ایس ایس پی ملیر کے بارے میں شرجیل میمن نے کہا کہ راؤ انوار کے معاملے پر کورٹ اپنا کام کر رہی ہے مگر میں سمجھتا ہوں کہ  راؤ انوار کو مقدمات کا سامنا کرنا چاہیے۔ایم کیو ایم میں اختلاف کے حوالے سے سابق وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم سے نظریاتی اختلاف ضرور ہیں مگر خواہش یہ ہے کہ ایم کیو ایم دھڑون کو اب اتحاد  کر لینا چاہیے۔میڈیا سے گفتگو میں شرجیل میمن نے کہا کہ کراچی کے شہریوں کے لئے پیپلز پارٹی بہترین آپشن ہے، کراچی کے شہری پیپلزپارٹی کو ووٹ نہ بھی دے تب بھی پیپلزپارٹی کراچی شہر کی خدمت کرے گی۔اس سے قبل تین فروری کو ہونے والی سماعت کے موقع پراحتساب عدالت کے جج کی غیرحاضری کے باعث شرجیل میمن اور دیگر ملزمان پر آج بھی فرد جرم عائد نہ کی جاسکی تھی، جس کے باعث کیس کی سماعت پندرہ فروری تک ملتوی کردی گئی تھی