سپریم کورٹ کا شیر زمان کو گرفتار نہ کرنے -متعلقہ عدالت پیش ہونے کا حکم

15 فروری 2018

اسلام آباد(نمائندہ نوائے وقت)سپریم کورٹ آف پاکستان نے ملتان ہائیکورٹ بار کے صدر شیر زمان کے وکالت لائسنس معطلی کیس میںشیر زمان کو متعلقہ عدالت میں پیش ہونے کی ہدایت کرتے ہوئے انہیں گرفتار نہ کرنے کا حکم دے دیا چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ کے سامنے ملتان ہائی کورٹ بار کے معطل صدرشیر زمان کیس کی سماعت ہوئی تو چیف جسٹس نے کہاکہ شیر زمان آئندہ پیر کوعدالت میں پیش ہو جائیں اورعدالت میں پیشی تک انہیں گرفتار نہیں کیا جائے گا۔ شیر زمان کے وکیل نے استدعا کی کہ شیر زمان کا وکالت کا لائسنس بحال کر دیں۔جس پر چیف جسٹس نے کہاکہ لائسنس بحالی کے لیے متعلقہ فورم سے رجوع کریں۔عدالت نے لاہورہائیکورٹ کو ہدایت کی کہ عدالت عالیہ کے فاضل چیف جسٹس معاملہ کا جائزہ لینے کیلئے نیا بینچ تشکیل دیں جو آئندہ ہفتے سے کیس کی سماعت کرے اور شیر زمان کو پیش ہونے تک گرفتار نہ کیا جائے۔