جماعت اسلامی برسراقتدار آ کر یکساں اسلامی نظام تعلیم رائج کریگی،لیاقت بلو چ

15 فروری 2018

اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی )جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ جماعت اسلامی برسراقتدار آ کر ملک میں نظریہ پاکستان سے ہم آہنگ اور ایک مستقل قومی تعلیمی پالیسی کے ذریعے سرکاری و پرائیوٹ تعلیمی اداروں کے لیے یکساں اسلامی نظام تعلیم رائج کرے گی ۔ انہوں نے کہاکہ ہم شرح خواندگی کو 5 سال میں 100 فیصد کریں گے جبکہ میٹرک تک تعلیم مفت و لازم ہوگی ۔ انہوں نے کہاکہ اردو کو ذریعہ تعلیم بنانے کے ساتھ ساتھ تمام صوبائی و علاقائی زبانوں کو ترقی کے بھر پور مواقع فراہم کیے جائیں گیان خیالات کا اظہار انھوں نے وائز کالج برائے خواتین ملٹی گارڈنز کی افتتاحی تقریب سے خطاب کر تے ہو ئے کیا ۔اس موقع پر وزیر مملکت چو ہدری جعفر اقبال ، امیر جماعت اسلامی اسلام آباد زبیر فاروق خان ، نائب امیر حافظ تنویر احمد اور محمد سفیان عباسی بھی مو جو د تھے ۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ برسراقتدار اور سابقہ تمام جمہوری و فوجی حکومتوں نے تعلیمی نظام کوتباہی و بربادی سے دوچار کیا ہے صرف زبانی جمع خرچ اور میڈیا پر تشہیر کے ذریعے شرخ خواندگی کو بڑھانے کے دعوے محض دھوکا ہی ثابت ہوئے ہیں ۔ انھوں نے کہا حکمرانوں ریاستی ذمہ داری بنتی ہے کہ میٹرک تک طالب علم کو مفت تعلیم دی جائے۔ نظام تعلیم کو یکساں کرکے احساس محرومی کو مٹایا جائے اور اردو کو ذریعہ تعلیم بناکر نوجوانوں کو خداداد صلاحیت کی بنیاد پر آگے بڑھنے کیلئے عملی اقدامات کئے جائیں۔ وزیر مملکت چوہدری جعفر اقبال نے خطاب کر تے ہو ئے کہا تعلیم قوموں کی ترقی و خوشحالی کی ضامن ہوتی ہے اور اس کے ذریعے نسل نو کو مقصد و ترجیحات زندگی سے آشنا کرانا اورمعاشرے کی ترقی میں تعمیری کردار اداکرنے پر اکسایا جاتا ہے۔ تاہم وطن عزیز کا یہ المیہ رہا ہے کہ اس شعبے کو ہمیشہ مسائل کاشکار کر کے بحرانی کیفیت میں ڈالا گیا ۔