ریڑھ کی ہڈی سے گودا نکالنے کا کیس‘ مزید 7 خواتین کا میڈیکل مکمل

15 فروری 2018

حافظ آباد + ونیکے تارڑ(نمائندہ نوائے وقت+ نامہ نگار) غریب خواتین کو جھانسہ دے کر ان کی ریڑھ کی ہڈی سے پانی اور گودا نکالنے والے ملزمان کے خلاف دو نئے مقدمات درج کرلیے گئے۔ ملزمان کے خلاف درج مقدمات کی تعداد تین ہو گئی۔ مقدمات میں دہشت گردی، اقدام قتل سمیت دیگر دفعات شامل ہیں۔ ملزمان کے ظلم کا شکار مزید7خواتین کا میڈیکل ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال سے مکمل کر لیا گیا گروہ کے سرغنہ ندیم اور ساجد کا پولی گرافک ٹیسٹ بھی کروایا گیا۔ تفصیلات کے مطابق حافظ آباد میں جہیز فنڈز اور مالی امداد کا جھانسہ دیکر غریب خواتین کی ریڈھ کی ہڈی سے پانی اور دیگر مواد نکالنے والے ملزمان سے تفتیش کا عمل جا ری ہے ،گروہ کے ظلم کا شکار مزید آٹھ خواتین سامنے آنے پرمتاثرہ خواتین کی تعداد چوبیس ہوگئی‘متاثرہ خواتین کا کہنا تھا کہ انہیں جہیز فنڈز و امداد کا جھانسہ دیکر نیم اپاہج کر دیا گیا جس سے انہیں کام کاج اور چلنے پھرنے مشکلات کا سامنا ہے۔ ڈی ایچ کیو ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر ریحان اظہر کا کہنا ہے کہ متاثرہ خواتین کی تعداد چوبیس ہو گئی ہے جن کے میڈیکل کیے جا رہے ہیں، محکمہ صحت پنجاب کی ٹیم بھی معاملہ کی تحقیقات کر رہی ہے، پولیس نے گرفتار ملزمان ندیم اور ساجد کو پولی گرافک ٹیسٹ پنجاب سائنس فرانزک لیبارٹری لاہور سے کروائے ہیں۔ دوسری طرف سٹی پولیس نے شازیہ بی بی زوجہ فضل احمد اور سیف اللہ ولد غلام رسول کی مدعیت میں دو نئے مقدمات بھی درج کر لیے جن میں ATA6/7، 324، 420، 170،171دفعات شامل ہیں۔ پولیس ذرائع کے مطابق واقعہ کی اعلیٰ سطح پر تحقیقات کی جا رہی ہیں جس کے لئے پولیس افسران پر مشتمل کمیٹیاں ملزمان سے تفتیش کر رہی ہیں، فرانزک لیب کی رپورٹ کے بعد جلد اصل حقائق سامنے آجائیں گے۔ علاوہ ازیںگرفتار ہسپتال ملازم ساجد کے بہنوئی واجد کو گرفتار کرلیا گیا۔ ملزم واجد کو راولپنڈی کے علاقے روات سے گرفتار کیا گیا۔