جماعت الدعوۃ ، فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کے اثاثے ضبط کرنے کی کاروائی شروع

15 فروری 2018

اسلام آباد( وقائع نگار خصوصی)وفاقی حکومت نے جماعت الدعوہ اور فلاح انسانیت فاونڈیشن کے اثاثے ضبط کرنے کی منظوری دے دی اور صوبائی حکومتوں کوکارروائی کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔وفاقی حکومت کی جانب سے جماعت الدعوہ اور فلاح انسانیت فانڈیشن کے منقولہ، غیر منقولہ اور انسانی وسائل پر پابندی لگا دی ہے اور ان کے اثاثے منجمد کرنے کی ہدایت کر دی ہے جماعت الدعو اور فلاح انسانیت فاونڈیشن کے اثاثے سرکاری تحویل میں لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔حکومت نے تمام صوبوں کو بھی اس حوالے سے اقدامات اٹھانے کی ہدایت کی ہے،یاد رہے کہ جماعت الدعوہ اور فلاح انسانیت فاونڈیشن پر پابندی کا نوٹیفیکیشن حکومت کی جانب سے دس فروری کو جاری کیا گیا۔ دوسری جانب اسلام آباد میں جماعت الدعوہ سمیت تمام کالعدم تنظیموں کی سرگرمیوں پر پابندی کیلئے دفعہ 144 نافذ کی گئی۔ ڈپٹی کمشنر کی جانب سے جاری ہونے والے نوٹیفیکیشن کے مطابق کسی قسم کی فنڈریزنگ، سڑکوں پر بینرز آویزاں یا کسی قسم کی کوئی تقریبات منعقد نہیں کرسکیں گی۔نوٹیفیکیشن کے مطابق پابندی کا اطلاق فوری طور پر نافذالعمل اور دو ماہ تک موثر رہے گا۔ ڈپٹی کمشنر نے 71 کالعدم تنظیموں کی فہرست بھی اسسٹنٹ کمشنرز کو ارسال کردی ہے۔ڈپٹی کمشنر نے حکم جاری کیا کہ دو روز میں تمام اسسٹنٹ کمشنرز اپنے اپنے علاقوں کا جائزہ لے کر اپنی رپورٹس جمع کرائیں، جبکہ تمام کالعدم تنظیموں کی سرگرمیوں پر کڑی نظر رکھنے کی بھی ہدایت جاری کی گئی ہے۔
جماعت الدعوۃ پابندی