حکومت سندھ کا چیئرمین سینیٹ کو نئی کرولا کار فراہم کرنے سے انکار

15 فروری 2018

کراچی (سالک مجید) حکومت سندھ نے چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی کو صوبائی حکومت کی جانب سے نئی کرولا کار فراہم کرنے سے انکار کر دیا ہے اور چیئرمین سینیٹ کے زیر استعمال صوبائی حکومت کی پرانی کار کو بھی خلاف قواعد قرار دے دیا ہے۔مذکورہ کار چیئرمین سینیٹ کو منتخب ہونے کے بعد کراچی آمد کے موقع پر بھیجی گئی تھی جسے چیئرمین سینیٹ کی جانب سے آج تک واپس نہیں کیا گیا اور کئی سال سے ماہانہ500 لٹر پٹرول بھی حاصل کر رکھا ہے۔ سرکاری ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ چیئرمین سینیٹ کے اسٹاف کی جانب سے حکومت سندھ سے نئی کار مانگی گئی تھی جسے فراہم کرنے سے چیف سیکریٹری سندھ نے یہ کہہ کر انکار کر دیا کہ قواعد اس کی اجازت نہیں دیتے۔ کوئی قانون اور قائدہ اس بات کی اجازت نہیں دیتا کہ صوبائی حکومت کی جانب سے چیئرمین سینیٹ کو گاڑی فراہم کی جائے۔ یہ کام وفاقی حکومت اور سینیٹ سیکریٹریٹ کی ذمہ داری ہے البتہ حکومت سندھ کی جانب سے پروٹوکول ڈیپارٹمنٹ اس سلسلے میں اپنی ذمہ داریاں ضرور ادا کرتا آ رہا ہے اور آئندہ بھی کرتا رہے گا۔ ذرائع کے مطابق چیئرمین سینیٹ کو نئی گاڑی فراہم کرنے سے انکار پر چیئرمین سینیٹ کے اسٹاف اور چیف سیکریٹری سندھ کے مابین ٹیلیفون پر تلخ کلامی بھی ہوئی اور یہ صورتحال چیئرمین سینیٹ اور وزیراعلیٰ سندھ کے علم میں بھی لائی جاچکی ہے۔
نئی کار انکار