جونا گڑھ کا مسئلہ اقوام متحدہ میں اٹھایا جائے: نواب جہانگیر دلاور

15 فروری 2010
اسلام آباد (محمد نوازرضا/ وقائع نگار خصوصی) نواب آف جونا گڑھ جہانگیر دلاور خان نے کہا ہے کہ کشمیر کی طرح جونا گڑھ کے مسئلے کو اقوام متحدہ کے پلیٹ فارم پر اٹھایا جائے ‘ یہ تقسیم ہند کا نامکمل ایجنڈا ہے‘ بھارت نے جونا گڑھ پر غاصبانہ قبضہ کر رکھا ہے‘ روزنامہ نوائے وقت کے چیف ایڈیٹر جناب مجید نظامی نے جونا گڑھ کے مسئلہ کے ساتھ جس وابستگی کا اظہار کیا ہے وہ میرے لئے حوصلہ کا باعث ہے۔ انہوں نے یہ بات نوائے وقت کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کی۔ نواب آف جونا گڑھ نے کہاکہ ریاست جونا گڑھ نے تقسیم ہند کے وقت پاکستان کے ساتھ الحاق کا اعلان کیا تھا۔ قائداعظم محمد علی جناحؒ کی خواہش پر نواب آف جونا گڑھ محبت خان نے 15 دسمبر 1947ءمیں الحاق پاکستان کی دستاویز پر دستخط کئے جس کے بعد 25 اکتوبر 1947ءکو نواب آف جونا گڑھ قائداعظم محمد علی جناحؒ سے ملاقات کے لئے کراچی آئے معاہدے کے تحت طے پایا تھا کہ جونا گڑھ کے دفاع کی ذمہ داری پاکستان کی ہوگی‘ نواب آف جونا گڑھ پاکستان آئے تو ان کی عدم موجودگی میں بھارت نے اپنی افواج جونا گڑھ میں داخل کرکے قبضہ کرلیا تھا۔ انہوں نے کہاکہ وہ سندھ حکومت کے مشیر کے طور پر کام کررہے ہیں لیکن اگر انہیں وزیراعظم کے مشیر کے طور پر کام کرنے کا موقع ملے تو وہ مسئلہ جونا گڑھ کو بہتر طورپر اجاگر کرسکیں گے۔