بھارت دفاعی پوزیشن سے نکلنے کیلئے مذاکرات کا ڈھونگ رچا رہا ہے : دینی‘ سیاسی اور عسکری قیادت

15 فروری 2010
اسلام آباد (ثناءنےوز ) ملک کے دینی و سیاسی قائدین اور سابق عسکری قیادت نے کہا ہے کہ بھارت دفاعی پوزیشن سے نکلنے کے لئے مذاکرات کا ڈھونگ رچا رہا ہے ۔ پاکستان کو ہوشیار رہنا ہو گا ۔ بھارت اپنی عیاری سے باز نہیں آیا۔ پاکستان کو بغیر کسی تاخیر کے اپنی شرائط کا اعلان کرنا چاہئے کہ مذاکرات میں مسئلہ کشمیر اور پانی کے تنازع ہی کو مرکزی اور کلیدی حیثیت حاصل ہو گی ۔ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ بھارت مذاکرات سے انکار کر کے دفاعی پوزیشن پر چلا گیا تھا وہ اس دباﺅ سے نکلنا چاہتا ہے وہ اپنی شرائط پر اس دباﺅ سے نہیں نکل سکتا ہے ۔ سینیٹر پروفیسر خورشید احمد نے کہا کہ جب بھارتی وزیر اعظم یہ کہہ رہے ہیں کہ مذاکرات کے بامعنی ہونے کا امکان نہیں ہے تو ثابت ہو رہا ہے کہ بھارت صرف مذاکرات کا ڈھونگ رچا رہا ہے ۔سےنےٹر راجہ ظفر الحق نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمےر اقوام متحدہ کے اےجنڈے پر موجود ہے اگرچہ بھارت نے ےکطرفہ طور پر مسئلہ کشمےر کواقوام متحدہ کے اےجنڈے سے ختم کرنے کی کوشش کی مگر اسکی کوششےں کامےاب نہےں ہو سکےں ۔ سابق چےف آف آرمی سٹاف جنرل اسلم بےگ نے کہا کہ بھارت نواز عناصر نے مذاکرات اور امن کی آشا کی جو تحرےک شروع کی ہے وہ ناکام ہو گی ۔ آئی اےس آئی کے سابق سربراہ جنرل حمےد گل نے کہا کہ کشمےر کے بغےر کام نہےں بن سکتا ۔اقوام متحدہ کی قرار دادےں موجود ہےں بھارت تارےخ کا رخ نہےں موڑ سکتا ۔