A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined index: category_data

Filename: frontend_ver3/Templating_engine.php

Line Number: 35

وکلا کا عدلیہ سے اظہار یکجہتی کیلئے آج ملک گیر ہڑتال‘ شاہراہ دستور پر مظاہرے کا اعلان

15 فروری 2010
راولپنڈی + لاہور (اپنے سٹاف رپورٹر سے + مانیٹرنگ نیوز + نمائندگان) وکلاءکی قومی رابطہ کونسل نے ججوں کی تقرری کے حوالے سے حکومتی نوٹیفکیشن کو آئین سے متصادم قرار دیتے ہوئے آج (سوموار) کو ملک گیر ہڑتال کا اعلان کر دیا ہے جبکہ گزشتہ روز گوجرانوالہ‘ ساہیوال سمیت دیگر شہروں میں وکلاء نے حکومتی اقدام کیخلاف احتجاجی جلوس نکالے جبکہ لاہور ہائیکورٹ راولپنڈی بار ایسوسی ایشن میں ملک بھر کے وکلاءر ہنماﺅں کے اجلاس کی صدارت کے بعد سپریم کورٹ بار کے صدر قاضی محمد انور‘ حامد خان‘ لاہور ہائیکورٹ بار کی صدر جسٹس (ر) ناصرہ جاوید‘ ملک شہزاد‘ سندھ ہائیکورٹ بار کے صدر رشید اے رضوی‘ پشاور ہائیکورٹ بار کے صدر عتیق شاہ و دیگر نے مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ آج وکلاءتحریک کے رہنماﺅں کی قیادت میں شاہراہ دستور پر احتجاجی مظاہرہ کیا جائیگا۔ 9 مارچ کو عدلیہ سے اظہار یکجہتی کیلئے شاہراہ دستور پر ملک گیر وکلاءکنونشن ہو گا۔ ہم سپریم کورٹ کے فیصلے کی حمایت کرتے ہیں۔ ہائیکورٹس میں فوری طور پر ایماندار اور اہل ججوں کو تعینات کیا جائے۔ چیف جسٹس خواجہ شریف اور جسٹس ثاقب نثار کے فیصلے کو سراہتے ہیں جنہوں نے حکومتی فیصلوں کو ٹھکرا کر عدلیہ کی یکجہتی ثابت کر دی۔ انہوں نے ملک بھر کی بار ایسوسی ایشنوں کو ہدایت کی18 فروری کو عدلیہ سے اظہار یکجہتی منائیں اور صدارتی حکم نامے کیخلاف احتجاج کریں۔ سپریم کورٹ بار کے صدر قاضی انور نے کہا کہ حکومت این آر او پر سپریم کورٹ کے فیصلے پر من و عن عملدرآمد کرے۔ صدر زرداری کا نوٹیفکیشن غیر آئینی ہے۔ این این آئی کے مطابق اجلاس میں ڈرون حملوں‘ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کیخلاف اور ڈاکٹر عافیہ کی امریکی قید سے رہائی کے حوالے سے قراردادیں متفقہ طور پر منظورکر لی گئیں۔ دوسری جانب عدلیہ سے اظہار یکجہتی کیلئے گزشتہ روز گوجرانوالہ ڈسٹرکٹ بار کے صدر ضیغم اللہ اور دیگر عہدیداروں کی زیر قیادت ایک احتجاجی جلوس نکالا گیا جس میں شرکاء نے عدلیہ کے حق میں زبردست نعرے لگائے۔ اس موقع پر مقررین نے کہا کہ عدلیہ کے راستے میں حائل رکاوٹوں کو نیست و نابود کر دیا جائیگا۔ ساہیوال ڈسٹرکٹ بار کے صدر چودھری منیر و دیگر کی قیادت میں سینکڑوں وکلاءنے حکومتی اقدام کیخلاف ریلی نکالی۔ مقررین نے کہا کہ ہم این آر او زدہ حکمرانوں کو بھاگنے پر مجبور کر دینگے۔ شیخوپورہ بار کے قائم مقام صدر صوفی وسیم کی زیر صدارت ہنگامی اجلاس میں صدر زرداری کے نوٹیفکیشن جاری کرنے کے اقدام کیخلاف مذمتی قرارداد منظور کی گئی اور کہا گیا کہ آج عدالتی بائیکاٹ کیا جائیگا۔