پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ‘ افراط زر شدید دباﺅ کا شکار

15 فروری 2010
اسلام آباد (ثناءنیوز) پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے باعث افراط زر شدید دباﺅ کا شکار ہو گئی۔ گزشتہ ایک ہفتے کے دوران 23 اشیاءضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہو گیا۔ وفاقی ادارہ شماریات کی طرف سے جاری ہونےوالے اعداد و شمار کے مطابق 53 اشیاءضروریہ میں سے 23 اشیاءکی قیمتیں بڑھ گئیں۔ وفاقی ادارہ شماریات کے مطابق جن 23 اشیاءکی قیمتیں بڑھ گئیں۔ ان میں سے چائے پیک، ٹماٹر، گوشت، تیل سرسوں، تازہ دودھ ،گندم کا آٹا، گندم، گڑ، چاول، دال مسور، مٹی کا تیل،مرغی کا گوشت،ایل پی جی سلنڈر، سرخ مرچ، پیاز، دال مونگ اور دال ماش کی قیمتیں کم جبکہ گھی اور چاول باسمتی (ٹوٹا) سمیت 17 مستحکم ریکارڈ کی گئیں۔ 11 فروری کو ختم ہو نےوالے ہفتے کے دوران گزشتہ سال کے اس ہفتے کی نسبت 3 ہزار روپے آمدنی والے طبقے کےلئے حساس اعشاریوں میں افراط زر کی شرح 18.24فیصد، 5 ہزار روپے تک کی آمدنی والے طبقے کےلئے 18.06،12ہزار روپے آمدن والے طبقے کےلئے 17.49فیصد،12ہزار روپے سے زائد آمدنی والے طبقے کےلئے 17.18فیصد اور مجموعی طور پر تمام طبقوں کےلئے حساس اعشاریوں میں افراط زر کی شرح 17.40فیصد ریکارڈ کی گئی۔