حکومت نے قومی بچت کے ادارے کو فعال بنانے کیلئے حکمت عملی وضع کر لی

15 فروری 2010
اسلام آباد (اے پی پی) حکومت نے قومی بچت کے ادارے کو مزید فعال بنانے کیلئے حکمت عملی وضع کر لی ہے جس کے تحت شرعی احکامات کی بنیاد پر نئے بچت سرٹیفیکٹس، غیر ملکی کرنسی میں بانڈز اور سرٹیفیکٹس جاری کئے جائیں گے جبکہ نیشنل سیونگز آرگنائزیشن کے تمام مراکز کو کمپیوٹر کے ذریعے آپس میں منسلک کیا جائے گا۔ اتوار کو ادارہ قومی بچت کے ذرائع نے بتایا کہ رواں مالی سال کے دوران ہی شرعی احکامات کے مطابق نفع نقصان میں شراکت کی بنیاد پر بچت پر سرٹیفیکٹس جاری کر دیئے جائیں گے۔ اس نئی سیکم کے تحت صارفین کو سود دینے کی بجائے، نفع نقصان میں شامل کر کے نفع کی رقم ادا کی جائی گی۔ ایک سوال کے جواب میں ذرائع نے کہا کہ نقصان کی صورت میں صارفین کو خسارہ بھی برداشت کرنا ہوگا۔ ذرائع نے کہا کہ سمندر پار پاکستانیوں کی بچتوں کو بروئے کار لانے کیلئے غیر ملکی کرنسی میں بانڈز اور سرٹیفیکٹس بھی جاری کرنے پر غور وحوض جاری ہے۔ توقع ہے کہ بہت جلد اس منصوبے پر بھی عمل درآمد شروع کر دیا جائے گا۔ ذرائع نے کہا کہ سال 2014ء تک ملک بھر کے تمام مراکز کمپیوٹر کے ذریعے باہم منسلک ہو جائیں گے اور اس کے علاوہ مراکز اپنے صارفین کو اے ٹی ایم کی سہولیات بھی فراہم کر ے گا۔