امتحانی نظام میں خرابی طلباء کی محنت کی توہین ہے: کمشنر ملتان

15 اپریل 2018

ملتان (نمائندہ نوائے وقت) کمشنر ملتان ڈویژن و چیئرمین تعلیمی بورڈ بلال احمد بٹ کی زیر صدارت پنجاب بھر کے تعلیمی بورڈکے کنٹرولرز کا اجلاس ملتان بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن کے کمیٹی روم میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں امتحانی نظام کی بہتری، پرچوں کی چیکنگ اور امیدواروں کی مارکس امپرومنٹ اور پرائیویٹ امیدواروں کی امتحانات سے قبل رجسٹریشن بارے سفارشات پیش کی گئیں۔ اس موقع پر چیئرمین ملتان بورڈ بلال احمد بٹ نے کہا کہ امتحانی نظام کی شفافیت کا معاملہ بہت اہم ہوتا ہے ۔ تمام ترقی یافتہ ممالک میں امتحان کی شفافیت کو اہمیت دی جاتی ہے اور اسے معتبرسمجھا جاتا ہے۔بدقسمتی سے ہم اس نظام کی خرابی اور اس سے پیدا ہونے والے مسائل کو قوم کی رسوائی نہیں سمجھتے۔ پرچہ بنانے والے ذمہ داروں کو درست پرچے بنانے چاہئیں اور بھرپور ایمانداری سے پرچوں کی چیکنگ کرنی چاہئے۔ پرچے بننے سے لے کر نتائج تک ہر شخص کو اپنا فرض ایمانداری سے ادا کرنا چاہئے۔ بلال احمد بٹ نے کہا کہ طلباء پورا سال اپنے امتحان کے لئے سخت محنت کرتے ہیں۔ امتحانی نظام کی خرابی دراصل طلباء کی محنت کی توہین ہے جو طالب عالم اچھے نمبر لینے کا اہل ہوتا ہے اس کا حق سلب کرلیاجاتا ہے ،یہ بات طلباء کے لئے حوصلہ شکنی کا باعث بنتی ہے اور معاشرے میں جرائم کا سبب بنتی ہے۔کمشنر ملتان نے ہدایت کی کہ تمام نئے رولز اور ہدایات داخلہ فارموں پر واضح پرنٹ کروائے جائیں۔اس موقع پر کنٹرولر تعلیمی بورڈ ملتان ڈاکٹر ظفر اقبال نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ملتان ڈویژن میں پرچوں کی مارکنگ کے لئے کل 13سنٹر بنائے گئے ہیں جس میں ملتان شہر میں 2بڑے سنٹر بنائے گئے ہیں۔ پرچوںکی نگرانی منظم اور بااعتماد طریقے سے کی جارہی ہے۔