کے الیکٹرک کیخلاف جمعہ کو وزیر اعلیٰ ہاؤس کا گھیراؤ، 27 اپریل کو ہڑتال ہوگی: سراج ا لحق

15 اپریل 2018

لاہور (سپیشل رپورٹر) امیرجماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ کراچی ملک کی معاشی و اقتصادی شہ رگ ہے لیکن افسوس کہ حکمران کراچی کے ساتھ مفتوحہ علاقے اور عوام کے ساتھ غلاموں جیسا سلوک کررہے ہیں ، عوام کو بجلی اور پینے کا پانی تک میسر نہیں اور حکمران عیش و عشرت کی زندگی گزاررہے ہیں ، کے الیکٹرک کے ظلم اور لوٹ مار کے خلاف اور عوام کے مسائل کے حل کے لیے 20اپریل کو وزیر اعلیٰ ہاؤس کا گھیراؤ کیا جائے گا اور 27اپریل کو کراچی میں ہڑتال کی جائے گی ، جو لوگ شہر کو مسائل کی دلدل سے نکالنا اور کراچی کو خوشحال اور روشن دیکھنا چاہتے ہیں وہ اس احتجاج اور ہڑتال میں شریک ہوکر کراچی کو خوشحال اور روشن بنانے کی جدوجہد کو کامیاب بنائیں ، نااہل قیادت اور حکومت کی وجہ سے کراچی مسائل کی آماجگاہ بن گیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ادارہ نور حق میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر حافظ نعیم الرحمن، ڈاکٹر اسامہ رضی ، عبدالوہاب ، زاہد عسکری اور دیگر بھی موجود تھے ۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ گیس کی کمی ، فرنس آئل اور پاور پلانٹس کو بند رکھنا عوام کا مسئلہ نہیں ، عوام بجلی کے بلز اور ٹیکس ادا کرتے ہیں ۔ بلا تعطل بجلی کی فراہمی اور مسائل سے نجات عوام کا حق اور حکومت کی ذمہ داری ہے ۔ کراچی کے عوام ان دنوں اذیت ناک لوڈشیڈنگ کا شکا رہیں اور کے الیکٹرک کی نااہلی اور ناقص کارکردگی اور اربوں روپے کی لوٹ مار نے شہریوں کی زندگی اجیرن کردی ہے ۔ حکومت نام کی کوئی چیز نظر نہیں آرہی ، کے الیکٹرک کو حکومت کی سرپرستی حاصل ہے اور نیپرا بھی عوام کو ریلیف دلانے کے لیے کچھ نہیں کررہی ۔انہوں نے کہا کہ کراچی کے عوام کو قومی شناختی کارڈ کے حصول میں نادرا کی طرف سے بھی بے شمار مسائل کا سامنا ہے ۔ نادرا کی وجہ سے صرف کراچی نہیں پورے ملک میں عوام کو مسائل کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ اسمبلی میں پیپلز پارٹی کی حکومت نے اپنی عددی اکثریت کی بنیاد پر یونیورسٹی ترمیمی بل منظور کرایا ہے اور سندھ کی تمام جامعات کو 1973ء کے آئین کے تحت حاصل خود مختاری کو ختم کردیا ہے اورچانسلر کے اختیارات گورنر سے لے کر وزیر اعلیٰ کے حوالے کردیئے گئے ہیں K-4 کی تعمیر میں وفاقی و صوبائی حکومتوں نے شروع سے ہی عدم توجہی اور مجرمانہ غفلت و لاپرواہی دکھائی ہے ۔انہوں نے کہا کہ شا م پر امریکہ اور اتحادیوں کا حملہ افسوسناک اور قابل مذمت ہے، روس اور امریکہ نے شام کے عوام کو تختہ مشق بنا لیا ہے اور نئے نئے میزائل اور ہتھیاروں کے تجربات شام کے اندر کئے جا رہے ہیں، خواتین اور بچوں کی آہ وبکا جاری ہے لیکن OIC، UNO، انسانی حقوق کی تنظیمیں سب خاموش ہیں ۔