مفتی ہدایت اﷲ پسروری کی نماز جنازہ ادا‘ قل خوانی آج ہو گی

15 اپریل 2018

ملتان ( نامہ نگار خصوصی) جمیعت علمائے پاکستان کے قائد علامہ شاہ احمد نورانی ؒ کے قریبی تحریکی ساتھی جے یو پی کے مرکزی سینئر نائب صدرمدرسہ دارالعلوم ہدایت القرآ ن ممتاز آباد ملتان کے بانی ومہتمم مفتی ہدایت اللہ پسروری مرحوم کی نماز جنازہ گذشتہ روز مدرسہ ہدایت القر آن ممتاز آباد کے ملحقہ گرائونڈ میں ادا کی گئی مرحوم کی وصیت کے مطابق نماز جنازہ ان کے صاحبزادہ مفتی عثمان پسروری نے پڑھائی جبکہ جماعت اہلسنت کے مرکزی امیر علامہ سید مظہر سعید کاظمی ، درگاہ مولانا حامد علی خانؒ کے سجادہ نشین صاجزادہ قاری احمد میاں نقشبندی، پیر اعجاز الحسنین المعروف لالہ سائیں نے دعا کرائی مرحوم کی قل خوانی آج 15اپریل اتوار کو نوری جامع مسجد مدرسہ ہدایت القرآن ممتاز آباد میں بعد نماز فجر شروع ہو گی دعا ٹھیک ساڑھے نو بجے ہو گی نماز جنازہ میں سینئر سیاستدان مخدوم جاوید ہاشمی،سابق وفاقی وزیر سید حامد سعید کاظمی، درگاہ چادر والی سرکارؒ کے سجادہ نشین پیر سید علی حسین شاہ، جمیعت علماء پاکستان کے مرکزی رہنما قاری زوار بہادر، حافظ نصیر نورانی سابق وفاقی وزیر سید تنویر الحسن گیلانی، درگاہ اجمیر شریف ؒ کے سجادہ نشین دیوان آل حبیب ، صاجزادہ عبد المصطفی ہزاروی، مفتی شوکت سیالوی، حافظ اقبال خاکوانی، محمد فارو ق خان سعیدی،زین قریشی، ڈاکٹر محمد صدیق خان قادری،شیخ طاہر رشید، شیخ طارق رشید، مفتی غلام مصطفی رضوی، مفتی حفیظ اللہ نقشبندی، حفیظ اللہ شاہ مہروی ، رانا شاہد الحسن ، بابو نفیس احمد انصاری،خواجہ محمد شفیق، خالد حنیف لودھی، ڈاکٹر اختر ملک، ایم پی اے حاجی جاوید اختر انصاری، رانا عبد الجبار، ملک عاشق علی شجرا، ایم این اے ملک عبد الغفار ڈوگر، آصف اخوانی راؤ عارف رضوی، میجر (ر) اقبال چغتائی ‘علامہ خالد محمود ندیم، حافظ محمد عمر شیخ، مفتی تصدق رضوی، شفقت حسنین بھٹہ، میاں جمیل احمد، میاں آصف ، قاری فیض بخش رضوی، منور احسان قریشی، علامہ عبد الحق مجاہد، علامہ انوار الحق مجاہد ، ملک جمال لابر، قاری عبد الرئوف قریشی، عظیم الحق پیر زادہ، ملک محمد یوسف‘ ملک عدنان ڈوگر،ملک انور علی، پروفیسر مظہر گیلانی، بشارت قریشی، سید طالب پرواز ، خواجہ محمد فاضل، شوکت اشفاق، مظہر جاوید، ‘ ندیم شاہین‘ رفیق قریشی رانا عرفان عبداﷲ‘جان حسنی (بلوچستان ) حاجی مختار انصاری، محمد ایوب مغل، زاہد بلال قریشی، سلطان محمود ملک، عابد حسین سیال (میاں چنوں ) ڈاکٹر شہوار مصطفی اویسی،رانا الطاف حسین، نیاز گل ناصر، شکیل چوہدری، ماسٹر اصغر علی شاہ، شیخ عمران ارشد، حمید نواز عاصم، احمد نواز عصیمی، ڈاکٹر عمران یوسف، مخدوم شعیب اکمل ہاشمی، میاں منیر احمد بودلہ، قاری امام بخش ، مولانا غلام حسین رضوی، مولانا نظام الدین فیضی، چوہدری محمد یسین، نواب منصور خان چاکرانی‘ رانا جمیل خاموش‘خلیل قریشی، پیر نوید فرید چشتی، اقبال یوسف نقشبندی، اسامہ علی ناز، قاری شفقت رسول مصطفائی، حافظ اللہ دتہ کاشف بوسن، مولانا شفیق اللہ البدری، ثقلین حیدر، ڈاکٹر اشرف علی قریشی، کنور محمدصدیق، چوہدری عبد الغفار، الحاج محمد علی انصاری، حافظ ناصر قریشی مفتی محمد شریف، حاجی اصغر علی انصاری، محمد قاسم، محمد طیب، حاجی سلیم قریشی، حاجی عبدالستار بھٹی سمیت سینکڑوں معززین شہر نے شرکت کی اور مرحوم کی وفات پر اظہار افسوس کیا اور ان کی دینی خدمات کو سراہا۔ دریں اثناء امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق‘ سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان و متحدہ مجلس عمل لیاقت بلوچ‘ مرکزی نائب امیر حافظ محمد ادریس‘ ڈاکٹر فرید احمد پراچہ‘ اسد اﷲ بھٹو‘ میاں محمد اسلم‘ امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد‘ سابق امیر و صوبائی پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر سید وسیم اختر و دیگر نے ممتاز عالم دین مفتی ہدایت اﷲ پسروری کے انتقال پر انتہائی رنج و غم اور افسوس کا اظہار کیا۔ تحریک انصاف کے سینیئر وائس چیئرمین مخدوم شاہ محمود حسین قریشی‘ جامعہ خیر المدارس کے مہتمم قاری محمد حنیف جالندھری‘ جمعیت علمائے پاسکتان کے مرکزی رہنما اور جامعہ غوثیہ ہدایت القرآن کے مہتمم علامہ مفتی ہدایت اﷲ پسروری کی وفات کی خبر سنتے ہی ان کے مدرسہ میں پہنچ گئے اور ان کی اچانک وفات پر اظہار تعزیت کرتے ہوئے ان کی وفات کو دینی اور تعلیمی حلقوں کے لئے ناقابل تلافی نقصان قراردیا۔ جماعت اہل سنت کے رہنما مولانا محمد فاروق سعیدی‘ علامہ سید محمد رمضان شاہ فیضی‘ وسیم ممتاز‘ ڈاکٹر محمد صدیق خان قادری بھی علامہ مفتی ہدایت اﷲ پسروری کی خدمات کو زبردست خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے ان کے لئے بلندی درجات کی دعا کی ہے۔