جلالپور اوچشریف روڈ7 سال میں مکمل‘ شہریوں نے سکھ کا سانس لیا

15 اپریل 2018

ملتان (واثق رؤف سے) نیشنل ہائی ویز اتھارٹی نے جلال پور پیروالا اوچ شریف سڑک اور پل کے ایسے منصوبے کا افتتاح وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے کروا دیا ہے جو 7 سال کی تاخیر سے مکمل ہوا ہے۔ منصوبہ پر دسمبر 2009ء میں کام شروع ہوا اور پہلا فیز اپریل 2011ء میں مکمل ہوا‘ دوسرے فیز کی تکمیل اگست 2011ء میں ہوئی تیسرا فیز ایمن والا پتن پر پل کی تعمیر اور 5.1 کلومیٹر پل کے دونوں اطراف اپروچ روڈز کا تھا اس منصوبہ پر جولائی 2009 میں کام شروع ہوا اور 14 اپریل 2011ء کو ایک سال 8 ماہ میں مکمل ہوا‘ چوتھا اور آخر فیز برج کے بعد 27 کلومیٹر روڈ کی تعمیر کا تھا اس پر بھی دسمبر 2009ء میں کام شروع ہوا‘ یہ دو سال کے عرصہ میں مکمل ہونا تھا تاہم اکتوبر 2011ء میں نیشنل ہائی ویز اتھارٹی نے اس منصوبہ کی تعمیراتی کمپنی کے اسلام آباد پشاور موٹروے منصوبہ کی 23 کروڑ روپے کی ادائیگی روک لی جس کے بعد کمپنی نے منصوبہ پر کام روک دیا اور 2011ء کے بعد سے 2017ء تک اس 27 کلومیٹر سے گزرنے والی ٹرانسپورٹ‘ عوام کو شدید مشکلات کا سامنا رہا۔ 2017ء میں این ایچ اے کے شعبہ کنسٹریکشن نے بامشکل تعمیراتی کمپنی کو دوبارہ کام کرنے پر راضی کیا گیا اور اب بامشکل 7 سال کی تاخیر کے بعد منصوبہ مکمل ہوا جس کا افتتاح این ایچ اے نے موجودہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے کروا دیا ہے۔ 7 سال بعد روڈ کے مکمل ہونے پر جنوبی پنجاب کے شہریوں نے سکھ کا سانس تو لیا ہے لیکن اس امر پر شدید حیرت کا اظہار کیا ہے کہ غفلت کے مرتکب افسران اور فنڈز کی فراہمی میں تاخیر کی تحقیقات کیوں نہیں کروائی گئیں۔ ٹرانسپورٹرز سمیت عام شہری اس عرصہ کے دوران خوار ہوتے رہے گاڑیاں کھٹارہ بن گئیں تاہم اب الیکشن قریب آتے ہی اس منصوبہ کا افتتاح کروایا گیا ہے 7 سال کی تاخیر سے مکمل ہونے والے منصوبہ کی افتتاحی تقریب پر لاکھوں روپے خرچ کر ڈالے ہیں۔

اوچشریف کامیلہ

تحریر: سید فہیم کاظمی الچشتی چہار یار:۔ سید جلال الدین بخاریؒ جنہیں سید جلال ...