محسن وال‘ تھپڑوں والی کبڈ ی نے طالبعلم کی جان لے لی

15 اپریل 2018

محسن وال ‘ خانیوال (نامہ نگار‘ نمائندہ نوائے وقت) محسن وال کے نواحی گاؤں کے گورنمنٹ بوائزہائی سکول 115 پندرہ ایل میں چھٹی کلاس کا طالبعلم تھپڑوں والی کبڈی کھیلتا جان کی بازی ہارگیا ،غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کرنے پر ہیڈ ماسٹر عابد حسین کو معطل کر کے میاں چنوں کالج کے پرنسپل رمضان راشد کو انکوائری افسر مقرر کر دیا گیا بلال کلاس فیلو عامر کیساتھ تھپڑوں والی کبڈی کھیلنے لگا کھیل کے دوران ہی وہ جاں بحق ہو گیا سکول ہیڈ ماسٹر نے نہ ہی پوسٹمارٹم کروانے دیا اور نہ بچے کو ہسپتال بجھوایا تفصیل کے مطابق محسن وال کے نواحی گاوں 115 پندرہ ایل کے گورنمنٹ بوائز ہائی سکول میں دو طلبا نے سنگین کھیل کھیلنے کا فیصلہ کیا چھٹی جماعت کے دونوں طلبا نے تھپڑوں والی کبڈی شروع کردی جس سے بلال ولد ریاض لگاتار تھپڑ برداشت نہ کرسکا اور زندگی کی بازی ہار گیا سکول انتظامیہ نے ہسپتال بھیجنے کی بجائے موت کے 45 منٹ بعد نعش بچے کے گھر بجھوادی اور والد کو کھیل کے دوران دل کادورہ سے موت کی اطلاع دی سکول کے ھیڈ ماسڑ عابد حسین اور انتظامیہ نے ضروری قانونی کاروائی کی بجائے واقعہ کو چھپانے میں اپنی توانیاں صرف کیں بچے کی موت کی ویڈیو نے تمام پول کھول دیا سکول کے ھیڈ ماسٹر کو معطل کر کے رمضان ارشد کو انکوائری افسر مقرر کر دیاگیا ۔