باردانہ کیلئے درخواستیں 16 سے 20 اپریل تک وصول کی جائیں گی

15 اپریل 2018

گوجرانوالہ (نمائندہ خصوصی )قائم مقام ڈپٹی کمشنر کیپٹن (ر)رانا محمد وقاص نے کہا ہے کہ تمام محکمے اور متعلقہ افسران گندم خریداری کو شفاف بنانے اور وزیر اعلیٰ پنجاب کے ویژن کے مطابق کسانوں کو بھرپور ریلیف فراہم کرنے کے لیے محنت،تن دہی اور ایمانداری سے اپنا کردار ادا کریں ۔محکمہ خوراک کا کردار بنیادی اہمیت کا حامل ہو گا اور دیگر تمام متعلقہ محکمے اس کی معاونت کے لیے ان کے ہمراہ ہوں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گندم خریداری 2018-19کے انتظامات اور پالیسی کے جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر (جنرل )زاہد اکرام ،تمام تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنر ز (سٹی رائو سہیل اختر،صدر رانا محمد جمیل،نوشہرہ ورکاں نویدالاسلام ورک،وزیر آباد فیصل عباس مانگٹ)،ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر مظہر بلوچ ،ایس این اے تنویر عباس،اربن یونٹ کے نمائندہ ،محکمہ زراعت کے افسران کے علاوہ دیگر متعلقہ محکموں کے افسران نے شرکت کی ،قائم مقام ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ تمام گندم خریداری مراکز پر موجود ڈیٹا انٹری آپریٹر روزانہ کی بنیاد پر رپورٹ اپلوڈ کرنے کے پابند ہوں گے جسے پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کے ڈیش بورڈ پر بھی فراہم کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ کاشتکاروں کو ہر گندم خریداری مرکز پر تمام ممکنہ سہولتیں دستیاب ہوں گی ۔انہوں نے مارکیٹ کمیٹی اور فوڈ کنٹرولر کو بھی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ وہ بھی اپنی ذمہ داریاں بہتر طور پر سرانجام دیں تا کہ کسانوں سے گندم کی خریداری میں کوئی رکاوٹ اور مشکل پیش نہ رہے ۔کسانوں کے لیے سینٹرز پر بیٹھنے کے لیے کرسیاں ،پینے کا ٹھنڈا اور صاف پانی اورلوڈ شیڈنگ کی صورت میں جنریٹرز کا انتظام کیا جائے ۔تمام سینٹرز پر ایک ہی رنگ کے ٹینٹ لگائے جائیں اورگندم خریداری پالیسی 2018 سے متعلق ضروری معلومات نمایاں جگہ پر آویزاں کی جائیں،اجلاس کے شرکاء کو بریفنگ دیتے ہوئے ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر نے بتایا کہ 16اپریل سے 20اپریل تک کسانوں سے درخواستیں وصول کی جائیں گی اور درخواست دہندہ سے کوائف کی تفصیلات بھی لی جائیں گی تا کہ کاشت کا رقبہ اور پالیسی 2018-19کے مطابق باردانہ کا اجراء یقینی بنایا جاسکے۔انہوں نے مزید بتایا کہ خریداری مراکز پر انتظامات قبل از وقت مکمل کر لیے جائیں گے ۔