گوجرانوالہ: نجی بنک میں سکیورٹی گارڈ کی فائرنگ‘ پولیس اور شہریوں کو کئی گھنٹے پریشان کیے رکھا

15 اپریل 2018

گوجرانوالہ (نمائندہ خصوصی ) سیکیورٹی گارڈ نے بنک کے اندر فائرنگ کر کے خوف وہراس پھیلا دیا ، ڈاکوئوں کی موجودگی کی اطلاع پر پو لیس افسران بھاری نفری سمیت موقع پر پہنچ گئے ،جبکہ تین گھنٹے تک پو لیس کی ناک میں دم کرنیوالے گارڈ کو حراست میںلیکر تھانے منتقل کر دیا گیا ، تفصیلات کے مطابق لاری کے قریب واقع نجی بنک میں پپناکھہ کا رہائشی حسن جاوید تقریباً ایک سال سے ڈیوٹی سرانجام دے رہا ہے ، جس نے بنک کی چھٹی ہونے کے باعث دوران ڈیوٹی نامعلوم وجوہات کی بناء پر اندر سے اچانک فائرنگ شروع کر دی جسکے نتیجے میں بنک کے شیشے ٹوٹ گئے ، بعدازاں سیکیورٹی گارڈ نے چھت اور بنک کا دروازہ بند کر دیا ، فائرنگ کی آواز سن کر شہریوں میں خوف وہراس پھیل گیا ، تاہم واقعہ کی اطلاع پا کر پو لیس افسران بھاری نفری سمیت موقع پر پہنچ گئے ، جبکہ پہلے پہل پو لیس کو یہ معلوم ہوا کہ ڈاکو ئوں نے بنک میں داخل ہو کر واردات کے دوران فائرنگ کی ، جس پر پو لیس نے بنک کی چھت اور باہر اپنی پو زیشنیں سنبھال لیں ، جنہیں بعدازاں معلوم ہوا کہ بنک میں صرف سیکیورٹی گارڈ موجود ہے ، پو لیس نے خوف وہراس پھیلانے والے سیکیورٹی گارڈ کے اہلخانہ کو بھی موقع پر طلب کر لیا ، پو لیس نے بمشکل حسن جاوید کے چچا کو بنک کے اندر بھجوایا ، جو طویل جدو جہد کے بعد سیکیورٹی گارڈ کو بنک سے باہر لانے میں کامیاب ہو گیا ، پو لیس نے تین گھنٹے تک ناک میں دم کرنیوالے گارڈ کو حراست میں لیکر تھانے منتقل کیا ، اس حوالے سے پو لیس کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی گارڈ کو ذہنی توازن مکمل طور پر درست نہیں ہے ، جس کا اسکے ورثاء علاج بھی کروا رہے ہیں ، تاہم پو لیس مصروف تفتیش ہے ۔