کوٹلی ستیاں میں گورنمنٹ گرلز ہائی سکول کی طالبات کی وین پر فائرنگ کرنیوالے ملزمان گرفتار

15 اپریل 2018

راولپنڈی(اپنے سٹاف رپورٹر سے)راولپنڈی پولیس نے کوٹلی ستیاں میں گورنمنٹ گرلز ہائی سکول کی طالبات کی وین پر فائرنگ کرنے والے ملزمان گرفتار کرلئے ہیں جبکہ تھانہ رتہ امرالکے علاقے بورنگ روڈ پر لیڈی سکول ٹیچر کو دو ران ڈکیتی قتل کرنے والے تین میں سے دو ملزمان حراست میں لے لئے گئے یہ انکشاف ایس ایس پی آپریشنز راولپنڈی محمد بن اشرف نے ہفتہ کو اپنے دفتر کے میٹنگ روم میں ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر ایس پی پوٹھوہار سید علی ار اے ایس پی جویریہ بھی موجود تھے ایس ایس پی آپریشنز نے کہا کہ کوٹلی ستیاں میں دروز قبل ملزمان کی فائرنگ سے 16 سالہ طالبہ اریبہ دختر محمد قدیر میٹرک کا امتحان دے رہی تھی وہ جاں بحق ہوگئی تھی جبکہ دیگر تین طالبات زخمی ہوگئی تھیں گرفتار ملزمان کاشف ولد محمد جاوید اور معین ولد صفدر سکنائے کوٹلی ستیاں نے گاڑی کو روک کر اریبہ کو زبردستی اغواء کرنے کی کوشش کی جو مقتولہ نے ملزمان سے مزاحمت کی ملزمان میں سے کاشف ولد جاوید نے پستول سے اندھا دھند فائرنگ کی جس سے اربیہ قدیر زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاںبحق ہوگئی تھی اور مسماۃ حلیمہ اقبال ،ایمن،علیشہ بتول ملزمان کی فائرنگ سے زخمی ہوگئیںمقتولہ کے والد کی درخواست پر تھانہ کوٹلی ستیاں میں مقدمہ نمبر42مورخہ12-04-18بجرم302/324/365/511/34ت پ 7ATAدرج کیا گیا مقدمہ کی سنگینی کو مدنظر رکھتے ہوئے سٹی پولیس آفیسر راولپنڈی محمد افضال کوثر نے فوری طور پر ملزمان کی گرفتاری اور مقدمہ کی برحقائق یکسوئی کے لئے ایس ایس پی آپریشنز راولپنڈی کی براہ راست زیر نگرانی اے ایس پی کوٹلی ستیاں سرکل، ایس ایچ او تھانہ کہوٹہ ،ایس ایچ او تھانہ کوٹلی ستیاں ،و دیگر آئی ٹی ماہرین و افسران پر مشتمل ٹیم تشکیل دی جنہوں نے شب وروز انتھک محنت کرکے 2یوم میں نامزد ملزمان کو گرفتار کرکے آلہء قتل بھی برآمد کرلیا ایس ایس پی آپریشنز محمد بن اشرف نے کہا کہ جبکہ 27 مارچ کی صبح تھانہ رتہ امرال کے علاقے بورنگ روڈ پر ڈکیتی کی واردات کے دوران مزاحمت میں قتل ہونے والی سکول ٹیچرنازیہ کریم کے تین رکنی گینگ میں سے دو ملزمان حراست میں لے لئے ہیں جنہوں نے تھانہ پیرودہائی تھانہ نیو ٹائون سمیت مختلف تھانوں میںپندرہ سے زائد وارداتوں کا انکشاف کیا ہے یہ ہی ملزمان تھانہ پیرودھائی کے پرس سنیچنگ کے مقدمہ نمبر197/18اور مقدمہ نمبر221/18میں بھی ملوث ہیں جن میں مضروب تاحال ہسپتال میں زیر علاج ہیںایس ایس پی آپریشنز نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی مقدمہ میں ملوث ملزمان چاہے وہ کتنے ہی بااثر ہوں بلا تفریق ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔