زرداری کی سیاسی بصیرت کی وجہ سے جنرل مشرف کو ایوان صدر خالی کرنا پڑا

15 اپریل 2018

اسلام آباد(نمائندہ خصوصی)پاکستان پیپلزپارٹی کے سیکریٹری جنرل سید نیر حسین بخاری نے کہا کہ صدر آصف علی زرداری کی سیاسی بصیرت کی وجہ سے جنرل مشرف کو ایوان صدر خالی کرنا پڑا۔ صدر آصف علی زرداری نے اپنے تمام اختیارات پارلیمنٹ کو دئیے۔ 1973ء کے آئین کو اصل صورت میں بحال کیا، صوبوں کو خودمختاری دی، گلگت بلتستان اور پختوخوا کے عوام کو شناخت دی، سوات میں قومی پرچم دوبارہ سربلند کیا، صوبوں کو این ایف سی ایوارڈ دیا جبکہ شاہد خاقان عباسی کے وزیراعظم نواز شریف نے ہر وہ کام کیا جس میں کمیشن اور کمائی ہو۔ نواز شریف نے پارلیمنٹ کو بے توقیر کیا اور اداروں کو کمزور کیا۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف اور ان کے بھائی نے وفاق اور پنجاب کا سارا بجٹ سلطنت جاتی امراء اور لاہور کے پوش علاقوں پر خرچ کیا۔ انہوں نے کہا کہ گوادر آصف علی زرداری کا وژن تھا اور پاک ایران گیس پائپ لائن اس وژن کا تسلسل تھا۔ انہوں نے شاہد خاقان عباسی کو یاد دلایا کہ ان کے قائد نواز شریف جب بھی اقتدار میں آئے سرکاری ملازمین کو ملازمتوں سے برطرف کرکے ان کا معاشی استحصال کیا جس سے ان غریبوں کے گھروں کے چولہے بجھ گئے۔ نیر حسین بخاری نے کہا کہ قوم اس پہلو پر غور کرے کہ جب پیپلزپارٹی اقتدار میں آتی ہے تو نوجوانوںکو ملازمتیں میسر ہوتی ہیں، سرکاری ملازمین کی تنخواہوںمیں ریکارڈ اضافہ ہوتا ہے، بینظیر انکم اسپورٹ پروگرام کے ذریعے غریب خواتین کی مالی اعانت کی جاتی ہے اور ریاست کے ثمرات دور دراز علاقوں تک پہنچتے ہیں لیکن جب نواز شریف اقتدار میں آتے ہیں تو بیروزگاری کا سیلاب کیوں آتا ہے، مہنگائی کیوں ہوتی ہے، عوام پر روزگار کے دروازے کیوں بند کیا جاتے ہیں اور قومی خزانہ کیسے خالی ہو جاتا ہے۔