پاکستان کیخلاف منفی پراپیگنڈا ختم کرنے کیلئے سب کو کردار ادا کرنا ہو گا: سید ابن عباس

15 اپریل 2018

مانچسٹر(این این آئی)برطانیہ میں پاکستانی ہائی کمشنر سید ابن عباس نے کہا ہے کہ پاکستان حقیقی بنیادوں پر امن استحکام اور ترقی کی راہوں پر گامزن ہے لیکن ہم سب کو مل کرمنفی تاثر اور اپنے ملک کیخلاف منفی پراپیگنڈے کو ختم کرنے کیلئے اپنا اپنا کردار ادا کرنا چاہئے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مانچسٹر میں پاکستان قونصلیٹ جنرل کے زیر اہتمام پاکستانی کمیونٹی کے بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ خطے میں امن و استحکام کیلئے مسئلہ کشمیر کا حل ناگزیر ہے اور حکومت پاکستان اور پاکستانی عوام کی تمام تر سپورٹ اور ہمدردیاں کشمیری عوام کے ساتھ ہیں اور ہم مقبوضہ وادی میں بھارتی فوج کے ظلم، بربریت اور کشمیریوں کی نسل کشی کی نہ صرف شدید مذمت کرتے ہیں بلکہ اقوام متحدہ اور انٹرنیشنل کمیونٹی سے یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ان انسانیت سوز مظالم کا فوری نوٹس لے اور اس ضمن میں فوری اقدامات کرے ۔ سید ابن عباس نے کہا کہ پاکستان اوربرطانیہ کے مابین دیرینہ اور خوشگوار تعلقات ہیں اوریہ بات باعث اطمینان ہے کہ پاکستانی نژاد برٹش ممبرز پارلیمنٹ برٹش پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر اور نہتے کشمیریوں پر بھارتی ظلم و ستم کیخلاف موثر آواز بلند کرتے ہیں لیکن برطانیہ سے خوشگوار تعلقات ہونے کے باوجود ہمیں کچھ چیلنجز کا سامنا بھی ہے جیسا کہ گزشتہ دنوں کچھ ملک دشمن عناصر نے اپنے مذموم مقاصد اور پراپیگنڈے کیلئے ایک دوست ملک کی سر زمین استعمال کی اور پاکستان کیخلاف ایک اشتہاری مہم کا آغاز کیا اگرچہ پاکستانی ہائی کمیشن اور پاکستانی قونصلیٹ جنرل کی بروقت مداخلت سے اس اشتہاری مہم کو فوری طور پر روک دیا گیا بلکہ ہمیں یہ یقین دہانی بھی کرائی گئی کہ آئندہ اس قسم کی اشتہاری مہم کی اجازت نہیں دی جائیگی لیکن ضرورت اس امر کی ہے کہ آپ سب اپنے منتخب نمائندوں کے ذریعے کونسلوں پر دبائو ڈالیں کہ وہ اس طرح کے معاملات اور قوانین کااز سر نو جائزہ لیں۔ پاکستانی ہائی کمشنرنے برطانوی فارن اینڈ کامن ویلتھ رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہماری تمام تر کوششوں کے باوجود ، کشمیر میں ہونیوالے مظالم قتل عام اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو اس رپورٹ میں شائع نہیں کیا گیا ۔ ہم چاہتے ہیں کہ آپ بحیثیت پاکستانی اس سلسلے میں لابنگ کریں اور اپنے اپنے ممبرز پارلیمنٹ کو اس بارے میں اپنے تحفظات سے آگاہ کریں تاکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو ایف سی او رپورٹ کا حصہ بنانے کیلئے مدد ملے اور اس انتہائی سنجیدہ معاملے پر پیش رفت ہو سکے ۔ قونصل جنرل آف پاکستان مانچسٹر عامر آفتاب قریشی نے کہا کہ ناٹنگھم ویسٹ انگلینڈ میں پاکستانی کمیونٹی انتہائی متحرک ہے اور انہوں نے اپنی انتھک محنت سے شاندار کامیابیاں حاصل کی ہیں ۔ انہوں نے نو منتخب ہائی شیرف روبینہ شاہ کو مبارکباد دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا کہ پاکستانی کمیونٹی آئندہ بھی اپنی کامیابیوں کا سلسلہ جاری رکھے گی۔ پاکستانی نژاد برطانوی رکن پارلیمنٹ وزیر محمد افضل خان نے کہا کہ ہمیں اپنے پاکستانی ہونے پر فخر ہے اورہماری تمام سپورٹ حکومت پاکستان اور نہتے کشمیریوں کے ساتھ ہے اور اس ضمن میں ہم کسی بھی قربانی سے گریز نہیں کرینگے۔ بولٹن سے ممبر پارلیمنٹ یاسمین قریشی نے پاکستانی ہائی کمشنر اور ان کی ٹیم کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ سید ابن عباس نہ صرف اپنی سفارتی ذمہ داریاں شاندار طریقے سے انجام دے رہے ہیں بلکہ کسی بھی ایشو اور اس کے حل کیلئے ان کے دروازے ہر مکتب فکر اور سیاسی وابستگی رکھنے والے افراد کیلئے کھلے ہوئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور پاکستانی ہائی کمیشن کو ہر طرح کی سپورٹ جاری رکھی جائیگی۔ ممبر یورپی پارلیمنٹ سجاد حیدر کریم نے کہا کہ اگرچہ برطانیہ میں آباد پاکستانی کمیونٹی کی یہاں سیاسی وابستگیاں مختلف ہیں لیکن پاکستانی پرچم کے سائے تلے ہم سب ایک ہیں اور ہمیں بحیثیت قوم اپنی ذمہ داریوں کو سمجھنے اور پورا کرنے کی ضرورت ہے۔۔ ممبر یورپی پارلیمنٹ واجد خان نے کہا کہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں سب سے زیادہ نقصان پاکستان کو اٹھانا پڑا اور پاکستانی عوام نے اس جنگ میں سب سے زیادہ قربانیاں دیں۔ اوورسیز بورڈ آف گورنرز کے چیئرمین بیرسٹر امجد ملک نے کہا کہ پاکستانی کمیونٹی نے جہاں مختلف شعبہ ہائے زندگی میں نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں وہاں ہمیں اپنے رول ماڈل کو پروموٹ کرنے کی ضرورت ہے تاکہ پاکستان اور پاکستانی کمیونٹی کے متعلق کیا جانے والا منفی پراپیگنڈے کو کائونٹر کیا جا سکے۔ پاکستانی قونصلیٹ مانچسٹر کے زیر اہتمام اس بڑے کمیونٹی اجتماع میں گریٹر مانچسٹر کی نئی ہائی شیرف روبینہ شاہ اوران کی فیملی نے خاص طورپر شرکت کی اس موقع پر انٹر نیشنل گلو کار ارشد محمود ٗ افتخار افی اور محمد سرور نے اپنے فن کا مظاہرہ بھی کیا۔